اردو فاونڈیشن اور تریاق کی جانب سے تبسم اشفاق کی کتاب”اڑان”کارسم اجرا

0
231
اردو فاونڈیشن اور تریاق کی جانب سے تبسم اشفاق کی کتاب
اردو فاونڈیشن اور تریاق کی جانب سے تبسم اشفاق کی کتاب"اڑان"کارسم اجرا

انٹرنیشنل اردو فاونڈیشن اور تریاق کی جانب سے تبسم اشفاق شیخ کی کتاب “اڑان”کا رسم اجرا
ممبئ۔ 4 جنوری شام ساڑھے چھ بجے ممبئ پریس کلب نزد آزاد میدان میں انٹرنیشنل اردو فاوئنڈیشن اور تریاق کی جانب سے ادب اطفال کی ادیبہ اور شاعرہ محترمہ تبسم اشفاق شیخ کی بچوں کی ٣٥ نظموں پر مشتمل پہلی کاوش اڑان کا رسم اجرا عمل میں آیا۔تقریب کے مہمان خصوصی ممبئ کے آئ جی قیصر خالد صاحب تھے۔مہمان اعزازی دہلی سے تشریف لائے بچوں کے معروف ادیب محمد سراج عظیم اور ووگ تھئیٹر گروپ کے چیئرمین عدنان سرکھوت اور مسند صدارت پر بالی ووڈ کے اداکار علی خاں جبکہ نظامت کے فرائض نوجوان شاعر محسن ساحل نے انجام دئے۔
پروگرام کا آغاز مولانا انصار صاحب کی تلاوت قرآن سے ہوا۔ بعد ازاں انٹرنیشنل اردو فاوئنڈیشن کے صدر اور تریاق کے مدیر میر صاحب حسن نے تمام مہمانان کا استقبال کیا بعد میں تریاق کے نائب مدیر حنیف قمر نے مہمانان اور مصنفہ کا تعارف پیش کیا۔تعارف کے بعد مہمانان کی خدمت میں شال اور گلدستہ و مومینٹو میر صاحب حسن، عبداللہ،حنیف قمر ،عارف اعظمی صاحبان وغیرہ نے پیش کئے۔اس کے بعد کتاب کا اجرا کیا گیا اس وقت اسٹیج پر مہمانان کے علاوہ فرید خان بانی صدر اردو کارواں۔پروفیسر شبانہ خان صاحبہ، مشیر انصاری صاحب مدیر اردو آنگن بھی موجود تھے۔ پہلے ووگ تھئیٹر کے روح رواں عدنان سرکھوت نے کہا میں تبسم اشفاق کی کتاب دیکھ کر بہت خوش ہوا کہ ایک نو امیز جس نے صرف چھ مہینے پہلے ادب میں قدم رکھا ہے وہ آج اس اسٹیج پر موجود ہیں۔ہم بھی ووگ تھئیٹر گروپ اور دریافت اردو کے تحت نئے ٹیلینٹ کی تلاش میں اردو کی ترویج کے لئے کئ مقابلے کراتے ہیں جو کل ہند پیمانہ پر ہوتے ہیں۔اس موقع پر سراج عظیم نے کہا کہ سن اسی کے بعد سے ادب اطفال جو ہمارے گھروں میں موجود تھا وہ مفقود تھا اس کی بازیافت کے لئے انھوں نے آل انڈیا ادب اطفال سوسائٹی کی تشکیل کی جس کے تحت ادب اطفال پر سیمینار ورکشاپس وغیرہ کرائیں انھوں نے ایک واہٹس ایپ گروپ بچپن کے نام سے بنایا جو بچوں کے ادیبوں اور خاص طور پر ادب اطفال کے لئے مخصوص ہے۔ان کے مطابق یہ گروپ ادب اطفال اور س کے لکھنے والوں کے لئے ایک پلیٹ فارم ہے جسمیں ہندوستان کے ساتھ غیر ممالک کے ادباء بھی موجود ہیں۔ جہاں نئے لکھنے والوں کی حوصلہ افزائ کی جاتی ہے۔بچپن گروپ سے تحریک پاکر تقریبا دس نئے لکھنے والے پیدا ہوئے جن میں تبسم اشفاق بھی ہیں جنھوں نے چھ مہینے میں بچوں کے لئے نظمیں لکھنا شروع کیں اور ان کا پہلا مجموعہ اڑان اج اپ کے سامنے ہے۔قیصر خالد صاحب نے تبسم اشفاق شیخ کو مبارکباد پیش کی اور کہا کہ بچوں کے نفسیات پر شاعرہ کی پکڑ اچھی ہے۔ اپنے خطاب میں مزید انھوں نےکہا کہ ہم اپنے گھروں میں بچوں کا ادب پڑھائیں گے نہیں تو اردو کی ترویج کیسے ہوگی۔آپ کا دینی اور ادبی اثاثہ سب اردو میں ہے اگر اپ رسم الخط کو بدلیں گے تو اپنے ادبی سرمایہ اپنی تاریخ اور تہذیب سے کٹ جائیں گے اس لئے ادب اطفال کا فروغ اور نئے لکھنے والوں کی حوصلہ افزائ ہونا چاہئے۔صدارتی خطبہ میں علی خان صاحب نے تبسم اشفاق کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ فلم انڈسٹری اردو کی مرہون منت ہے کہ اس کے لکھنے والوں نے کئ شاہکار فلمیں سینکڑوں گانے ڈائلاگز دنیا کو دئے اردو کے بغیر انڈسٹری اگے بڑھ نہیں سکتی اسی وجہ سے بہت سی اداکاراوں اور اداکاروں نے خاص طور سے اردو سیکھی۔
شاعرہ تبسم اشفاق شیخ کو اڑان کی اس کاوش پر بچپن گروپ اور تریاق فاؤنڈیشن کی جانب سے مومینٹوز اور شال پیش کی گئی۔کتاب کے ناشر اشفاق خلیل شیخ اور کمپوزر آسیہ اقبال شیخ کو بھی مومینٹوز پیش کر کے انکی حوصلہ افزائی کی گئی۔
اس تقریب میں اردو کے ادباء و شعرا معزز حضرات و خواتین کے علاوہ اقبال نیازی چیئرمین کردار آرٹ اکیڈمی فاروق سید مدیر گل بوٹے، ظہیر انصاری مدیر تحریر نو، معین نظر صاحبان افسانہ نگار تبسم ناڈکر موجود تھے۔حنیف قمر نے شکریہ کی رسم ادا کی

Article on adab e itfaal

Sada Today Web Portal

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here