حالات یہاں تک کیسے پہنچے؟

0
17

 

Abdussalam Asim's profile photo

عبدالسلام عاصم ۔یو این آئی

قلم امانت حق ہے سو لکھ رہا ہوں میں:
۔۔۔۔ ۔۔۔۔ ۔۔۔۔ ۔۔۔۔ ۔۔۔۔ ۔۔۔۔ ۔۔۔۔ ۔۔۔۔ ۔۔۔۔ ۔۔۔۔ ۔۔۔۔
جمہوریت کو درپیش آزمائش سے گزرنے میں جمہوریت پسندوں کو ابھی اور رکاوٹوں بلکہ نقصانات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

بدلے ہوئے منظر نامے میں دہلی اسمبلی انتخابات کے نتائج اس سلسلے کی ایک کڑی ہو سکتے ہیں۔

اس صورتحال کا سامنا کرنے والا کوئی بھی حساس، ذہین اور باضمیر آدمی سمجھ سکتا ہے کہ حالات یہاں تک کیسے پہنچے اور مٹھی ✊ بھر حکومت پسندوں کی کن غیر ذمہ داریوں نے سو کروڑ سے زیادہ ہندستانیوں کو ایک ایسی آزمائش میں ڈال دیا جس کی تاریخ میں کوئی بھی نظیر دیکھنے سے آج بھی رونگٹے کھڑے ہو جاتے ہیں۔

ایسا نہیں کہ وقت نے سنبھلنے کا کوئی موقع ہی نہیں دیا۔ آخری موقع پوری ایک دہائی پر مشتمل تھا۔ اس موقع کو کس بری طرح ضائع کیا گیا، یہ کسی سے پوشیدہ نہیں۔

افسوس کسی بھی اہل اختیار نے اس ادراک سے کام نہیں لیا کہ جمہوریت کش ماحول ایک دن انتہائی خوفناک صورت اختیار کر سکتا ہے۔

دنیا گول ہے! اس کی ایک اچھی مثال بھی ہم پیش کر سکتے تھے!! جو مثال سامنے ہے وہ تو برائے عبرت ہے!!!

اس وقت ہر اختلاف اور ہر فرق سے بالا تر ہو کر ایک دوسرے سے یگانگت کے ساتھ اتحاد کی ضرورت ہے۔ نشانے پر کسی دشمن کو نہیں، اس ذہنی پنجڑے کو رکھنا ہے جس کے اندر کئی دوست پھنسے ہوئے ہیں۔ ہمیں انہیں نکال کر اپنے ❤ کے قریب لانا ہے اور ان کے کنڈیشنڈ ذہن کو یہ آیت سمجھنے کے قابل بنانا ہے کہ:-
رنگ اور نسل، ذات اور مذہب
جو بھی ہے آدمی سے کمتر ہے
وما علینا الاالبلاغ ۔ ۔ ۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here