شہریت کا قانون بھارت کو ہندو ریاست بنانا ہے،امریکی میگزین

0
152
شہریت کا قانون بھارت کو ہندو ریاست بنانا ہے،امریکی میگزین
شہریت کا قانون بھارت کو ہندو ریاست بنانا ہے،امریکی میگزین

واشنگٹن امریکی جریدے کاکہنا ہے کہ شہریت کا قانون بھارت کو ہندو ریاست بنانا ہے،امریکی اخبار نیویارک ٹائمز نے بھارت میں شہریت کے نئے متنازع قانون کو امتیازی قانون قرار دیتے ہوئے اس کی مذمت کی ہے اور تمام جمہوری ملکوں پر زور دیا ہے کہ وہ بھارت کے اس اقدام کی مخالفت کریں۔روزنامہ نے اپنے اداریے میں کہا کہ بھارت میں مقیم بیس کروڑ مسلمانوں کے خدشات بالکل درست اور حقائق پر مبنی ہیں کہ اس قانون کا مقصد تارکین وطن کی مدد نہیں بلکہ یہ نریندر مودی اور بھارتی وزیر داخلہ امیت شاہ کی اس مہم کا حصہ ہے جس کا مقصد مسلمانوں کی محرومیوں میں اضافہ کرنا اور بھارت کو ہندو ریاست میں تبدیل کرنا ہے۔ اخبار نے اپنے ایڈیٹوریل میں مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرکے وادی کو یونین کے ساتھ الحاق کرنے اور آسام میں 20 لاکھ مسلمانوں کو شہریت سے محروم کرکے محض ہجوم درج کرنے پر بھی مذمت کی گئی۔نیویارک ٹائمز کے مطابق ʼاس قانون کا مقصد تارکین وطن کی مدد کرنا ہرگز نہیں بلکہ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی اور ان کے وزیر داخلہ
امیت شاہ کی تشہیر ہے۔کثیر الاشاعت اخبار نے اپنے ایڈیٹوریل میں کہا کہ ʼبھارت کے 20 کروڑ مسلمانوں نے قانون سے متعلق ٹھیک اندازہ لگایا۔ایڈیٹوریل میں کہا گیا کہ ʼشہریت سے متعلق قانون کا مقصد مسلمانوں کو پسماندہ کرنا اور بھارت کو صرف ہندوں کا ملک قرار دینا ہے جبکہ مسلمان 1 ارب 30 کروڑ آبادی میں 80 فیصد ہیں

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here