غزل۔ دیکھ لے مجھ کو وہ محبت سے۔پھر تو دنیا میری بدل جائے

0
32
غزل۔ دیکھ لے مجھ کو وہ محبت سے۔پھر تو دنیا میری بدل جائے
غزل۔ دیکھ لے مجھ کو وہ محبت سے۔پھر تو دنیا میری بدل جائے

غزل۔سرحد پار سے

دل کا ارمان سب نکل جائے
تیرے آنے سے دل بہل جائے

کہہ رہی ہے ہماری خاموشی
عشق کا اک چراغ جل جائے

اس سے پہلے کہ میں ہی مر جاؤں
یہ نہ دیکھوں کہ تو بدل جائے

اسکو سوچوں تو وہ چلا آئے
اس پہ جادو ہی میرا چل جائے

کل کبھی بھی نہ آئے میرے لئے
روز تجھکو کہوں تو کل جائے

دیکھ لے مجھ کو وہ محبت سے
پھر تو دنیا میری بدل جائے

ناز اس کے لئے سنورتی رہوں
جب وہ آئے تو دل مچل جائے

Sada Today web portal

Ghazal by Naaz khan

ناز خان

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here