غزل ۔جب سے تم قریب ہو گئے۔ ہم بھی خوش نصیب ہوگئے 

0
430
غزل ۔جب سے تم قریب ہو گئے۔ ہم بھی خوش نصیب ہوگئے
غزل ۔جب سے تم قریب ہو گئے۔ ہم بھی خوش نصیب ہوگئے
جب سے تم قریب ہو گئے
ہم بھی خوش نصیب ہوگئے
ایک تم حبیب ہو گئے
سینکڑوں رقیب ہو گئے
تم بھی بد حواس سے ہوئے
ہم بھی کچھ عجیب ہو گئے
آنکھوں تک نہیں آتے
خواب عندلیب ہو گئے
ہم سے سینکڑوں عاشق
زینت صلیب ہو گئے
مفلسوں کو تخت مل گیا
تاجور غریب ہو گئے
ان سے بچ کے جائوں کہاں
سائے بھی نقیب ہو گئے
گونگے بے زباں ارشد
واعظ و خطیب ہو گئے
تیجہ فکر
محمد ارشد خان رضوی فیروزآبادی
شعبہ اردو سینٹ جانس کالج آگرہ
ghazal by arshad khan
sada today web portal

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here