فرحانہ رحمن میموریل ٹرسٹ اورکلیگ فاؤنڈیشن کی جانب سے مفت طبی کیمپ کا انعقاد

0
23

نئی دہلی: فرحانہ رحمن میموریل ٹرسٹ اورکلیگ فاؤنڈیشن کی جانب سے جامعہ حضرت نظام الدین اولیاء ،ذاکر نگر نئی دہلی میں ایک مفت ڈینٹل چیک اپ کیمپ کا انعقاد کیا گیا ہے ،جس میں جامعہ حضرت نظام الدین اولیاء کے تقریباً تمام طلبہ واساتذہ سمیت قرب و جوار کے 150 لوگوں نے اپنے دانتوں کا مفت چیک اپ اور علاج کروایا اس کے علاوہ انھیں دوائیاں ،برش اور پیسٹ وغیرہ دیے گئے ۔ اس موقع پرڈاکٹر رافع حسن، ڈاکٹر محمد اسلم،ڈاکٹر سرفراز، محمد عیاض خان نے کیمپ میں آئے ہو ئے مریضوں کو دانتوں کی بیماریوں کی شناخت اور اس کے علاج کے ساتھ ساتھ ، دانتوں کی مہلک بیماریوں کی روک تھام کے لئے مفید مشوروں سے نوازا۔
ڈاکٹر رافع حسن نے بتایا کہ ہندوستان میں دانتوں کی بیماری بہت تیزی سے بڑھ رہی ہے اس کی وجہ یہ کہ آج لوگ دانتوں کی صفائی کا خیال نہیں رکھتے جس کی وجہ سے مسوڑوں کی تکلیف اور کینسر جیسے مہلک اور خطرناک بیماریاں روز بروز تیزی سے بڑھتی جارہی ہے ۔ فرحانہ رحمن میموریل ٹرسٹ کے چیئر مین شفیع الرحمن نے کہاکہ ہماری تنظیم کی جانب سے دہلی اوربہار کے علاوہ ملک دیگرریاستوں میں ہرماہ ہیلتھ کیمپ کا انعقاد کرکے لوگوں کو مہلک امراض کے تئیں بیدار کرتے رہتے ہیں اور انھیں مفت علاج ومعالجہ ،جانچ اور دوائیوں کی سہولیات فراہم کیے جاتے ہیں ۔کلیگ فاؤنڈیشن کے چیئر مین ایڈوکیٹ خلیق الرحمن نے ہیلتھ کیمپ کے انعقاد اغراض ومقاصدپر روشنی ڈالتے ہوئے کہاکہ اس طرح کا ہیلتھ کے انعقاد سے لوگوں میں طبی بیداری پیدا ہو نے کے ساتھ دیگر لوگوںمیں خدمت خلق کا جذبہ پیدا ہوگاجامعہ کے تعلیمی بورڈ کے رُکن کوثر نیازی نے کہا کہ دانتوں کا خیال رکھنا ہر انسان کے لئے نہایت ضروری ہے،اس بیداری مہم و مفت علاج کے لیے فرحانہ رحمن میموریل ٹرسٹ ،کلیگ فاؤنڈیشن اورلائف لونگ ڈینل کلینک دہلی کی جانب سے پورے دہلی میں اسلامی مدارس اور کالجز میں دانتوں سے متعلق بیماریوں پر کنٹرول کرنے کے لیے مفت ہیلتھ کیمپ لگاتی ہے۔اس فری کیمپ کے اختتام پر مولانا محمود غازی ازہری ڈائریکٹر جامعہ نیتمام ڈاکٹرو فاؤنڈیشن کے ممبران کا شکریہ ادا کیا اور انھیں مبارک باد دی۔ اس طبی کیمپ کو کامیاب بنانے میں عابد حبیب، محمد مسلم ، مولانا سیماب اختر فیضی ، مولانا شمس تبریز مصباحی و مولانا عبد الرحیم نظامی و جملہ اسٹاف نے اہم کردار ادا کیا ۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here