مہاراشٹر کے سابق وزیراعلیٰ اشوک چوہان کا وزیراعلیٰ دیوندر فڑنویس پر الزام

ممبئی:یہاں کوکن کے مہاڈعلاقہ میں جن سنگھرش یاترا کے دوران سابق وزیراعلیٰ اشوک چوہان نے ریاستی وزیراعلیٰ دیویندر فڑنویس پر سنگین الزام عائد کیے ہیں، انہوں نے کہا کہ ریاست میں ابھی اسمبلی کا الیکشن نہیں ہوا ہے، اس کے باوجود وزیراعلیٰ دیوندر فڑنویس کا یہ دعویٰ کہ ریاست کا اگلا وزیراعلیٰ میں ہی ہونگا، جوکہ یہ شک پیدا کرتا ہے کہ ای وی ایم کے تعلق سے لندن میں ہوئے انکشاف کے بعد کیا وزیراعلیٰ نے مہاراشٹر اسمبلی کے لئے ای وی ایم مینیج کرالیا ہے؟ مہاراشٹر پردیش کانگریس کمیٹی کے صدر ممبر پارلیمنٹ اشوک چوہان نے آج مہاڈ میں ایک جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہی ہیں۔ مہاڈ میں جن سنگھرش یاترا کے دوران منعقدہ جلسہ عام سے وہ خطاب کررہے تھے۔ اشوک چوہان نے کہا کہ بی جے پی وشیوسینا کی مرکزی وریاستی حکومت ہر محاذ پر ناکام ثابت ہوئی ہے۔ انتخابات کے عین موقع پر سیمنٹ کی سڑکیں بنانے کا ٹھیکہ دے کر کنٹریکٹروں کو فائدہ پہونچانے کی کوشش کی جارہی ہے۔ آنے والے دنوں میں عوام کو گمراہ کرنے اور خود کی تشہیر کے لئے کچھ مزید فیصلے لئے جائیںگے، کچھ اعلانات کئے جائیں گے۔ لیکن اب عوام ان کے گمراہ کن باتوں کا شکار نہیں ہوگی۔۲۰۱۴ءکے پارلیمانی انتخاب میں بی جے پی نے ووٹنگ سسٹم کو ہیک کرلیا تھا، جس کے انکشاف کے بعد آج پورے ملک میں ہنگامہ برپا ہے۔ اشوک چوہان اسی بنیادپر بی جے پر تنقید کررہے تھے۔انہوں نے کہا کہ ۲۰۱۴ء کے انتخاب میں بی جے پی نے کانگریس مکت بھارت کا نعرہ دیا تھا۔ لیکن بی جے پی وشیوسینا کے دورِ اقتدار میں عوام اب کانگریس یکت بھارت کا نعرہ لگانے لگی ہے۔ مدھیہ پردیش، چھتیس گڑھ اور راجستھان کے نتائج سے یہ ثابت ہوجاتا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے