عام آدمی پارٹی سے الگ ہوئے آشوتوش کا وزیراعلیٰ کجریوال پر حملہ

کہا، 23سالہ صحافتی زندگی میں کبھی کسی نے ذات کے بارے میں نہیں پوچھا لیکن سیاسی زندگی میں آتے ہی پوچھ لیا تھا

نئی دہلی: صحافت سے سیاست میں انٹری کرنے کے بعد یعنی صحافت کو خیرباد کہ کر سیاست میں آکر عام آدمی پارٹی کے دامن تھامنے والے آشوتوش نے پھر سیاست کو خیرباد کہہ دیا۔ وجہ کیا ہے کہ اس کی تفصیلات ابھی تک معلوم نہیں ہوسکی ہیں، لیکن یہ سچ ہے کہ وہ سیاست سے بھی خود الگ کرلیے ہیں۔ اسی بیچ دہلی کے وزیراعلیٰ اور عام آدمی پارٹی کے کنوینر اروند کیجریوال پر حملہ بولتے ہوئے کہا کہ 33سالہ صحافتی زندگی میں کسی نے کبھی میری ’ذات‘ نہیں پوچھاتھا، لیکن 2014کے لوک سبھا الیکشن میں مجھے بطورامیدوار اعلان کیا گیا تھاتو میرے عرفی نام (سر نام) کا حوالہ دیتے ہوئے اس کی وضاحت طلب کی گئی تھی، حالانکہ میں اس وقت بھی اسکی مخالفت کی تھی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے