پریس ریلیز

0
60

ملک میں نکلے خیر سگالی اور فرقہ وارانہ ہم آہنگی کا کارواں ۔ خواجہ محمد شاہد
کانپور ۔ یوپی رابطہ کمیٹی کے نو منتخب صدر سابق ڈی جی پولیس اتر پردیش جناب رضوان احمد صاحب کے اعزاز میں صدیق فیض عام انٹر کالج میں منعقدہ میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی کے پرو وائس چانسلر اور یوپی رابطہ کمیٹی کے نائب صدر خواجہ محمد شاہد نے کہا کہ ملک کے حالات کو دیکھتے ہوئے تعلیم کے ساتھ بھائی چارے پر خاص توجہ دینے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ 1992 میں رابطہ کمیٹی نے اس وقت سید حامد سابق وائس چانسلر علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کی قیادت میں تعلیمی کارواں نکالا تھا جب لوگوں میں مایوسی تھی ۔ کارواں کے ذریعہ عوام کی ہمت بندھائی گئی ۔ یوپی رابطہ کمیٹی نے فرقہ وارانہ ہم آہنگی، کاروان انصاف، معیاری تعلیم، تکنیکی تعلیم و روز گار وغیرہ کارواں نکالے ۔ اس وقت ملک کے حالات لگاتار خراب کئے جا رہے ہیں ۔ایسے میں اہل وطن کو یہ بتانے کی ضرورت ہے کہ آزادی کے متوالوں نے ملک کے لئے کیا خواب دیکھے تھے ۔ مسلمان کیا سوچ کر یہاں رکے تھے ۔ اس وقت تشخص کا سوال ہے جس پر تعلیم کے ساتھ جوڑ کر کام کرنے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے خیرسگالی اور فرقہ وارانہ ہم آہنگی کارواں نکالنے اور اس کے لئے ترسیل کے نئے ذرایع استعمال کرنے کا مشورہ دیا ۔
اس موقع پر رابطہ کمیٹی کے جنرل سکریٹری امان الله خان نے یوپی رابطہ کمیٹی کے اغراض و مقاصد پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ یہ تعلیمی ترقی، معاشی خوشحالی اور سماجی بہتری کے لئے کام کرنے والی تنظیم ہے ۔ ملک میں دوستی، خیرسگالی اور بھائی چارے کی فضا ہموار کرنے کے لئے کوشاں ہے ۔ کمیٹی دوسری تنظیموں کے مابین اتحاد اور تعاون کا ماحول بنانا چاہتی ہے ۔ انہوں نے اکتوبر میں نکالے جانے والے کارواں کا خاکہ پیش کیا اور جناب عبدالرشید سابق ڈپٹی سیکرٹری وزارت داخلہ کے رابطہ کمیٹی کے خازن منتخب ہونے کا اعلان کیا ۔ نو منتخب صدر جناب رضوان احمد صاحب نے کہا کہ ہم آپسی ہم آہنگی کو فروغ دینے کے ساتھ اخلاقیات و معاملات پر بھی زور دیں گے کیونکہ آج کل اس کی بات نہیں ہوتی ۔ انہوں نے کہا کہ خدمت خلق کو عبادت کا درجہ حاصل ہے ۔ پڑوسیوں اور اہل وطن کا بھی ہم پر حق ہے اسے ہمیں نہیں بھولنا چاہیے ۔ ہمارا سماج سب کو ساتھ رکھنے والا سماج ہے اور یہی اس کی خوبصورتی ہے ۔ جسے ہمیں واپس لانا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں تعلیم کے ساتھ تربیت پر بھی زور دینا ہے ۔ تعلیم کے مشن سے نئے لوگوں کو جوڑنا ہے تاکہ یہ کام اور اچھے انداز میں ہو سکے ۔
منزل ملے نہ ملے مجھے اس کا غم نہیں
منزل کی راہ میں میرا قافلہ تو ہے۔
رابطہ کمیٹی کے مقامی ذمہ دار ڈاکٹر محمد جمیل صاحب نے مہمانوں کا استقبال کیا اور یوپی رابطہ کمیٹی کے تاریخی پس منظر پر روشنی ڈالی ۔ صدیق فیض عام انٹر کالج کے مینیجر مصباح الحق نے بتایا کہ یہ اسکول صرف یوپی رابطہ کمیٹی کے قیام کا گواہ نہیں ہے بلکہ ندوۃ العلماء ہند کی بنیاد بھی یہیں رکھی گئی تھی ۔ یہ شمالی ہند کا پہلا مسلم ادارہ ہے ۔ یہاں سے جو تحریک شروع ہوئی ہے کامیاب ہوئی ہے ۔ میٹنگ میں ریاست کے سبھی ممبران و عہدیداران نے شرکت کی ۔ شاہد وصیم نے شکریہ کے فرائض انجام دیئے جبکہ عبید اقبال عاصم نے نظامت کی ذمہ داری ادا کی ۔ اس موقع پر نو منتخب صدر کو میمینٹو پیش کیا گیا ۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here