مغربی بنگال میں ڈاکٹروں کاریاستی سرکار کے خلاف احتجاج ۔مظاہرے اور ہڑتال کا اعلان

0
136
مغربی بنگال میں ڈاکٹروںکاریاستی سرکار کے خلاف احتجاج ۔مظاہرے اور ہڑتال کا اعلان
ون کو مغربی بنگال میں کولکاتا کے نیل رتن سرکار میڈیکل کالج میں علاج کے دوران ایک شخص کی موت کے بعد ناراض اہل خانہ نے ڈاکٹروں کو نازیبا الفاظ کہے تھے۔ جس کے بعد ڈاکٹروں نے معافی مانگنے کو کہا تھا لیکن بعد میں معاملہ بہت بگڑ گیا

جون کو مغربی بنگال میں کولکاتا کے نیل رتن سرکار میڈیکل کالج میں علاج کے دوران ایک شخص کی موت کے بعد ناراض اہل خانہ نے ڈاکٹروں کو نازیبا الفاظ کہے تھے۔ جس کے بعد ڈاکٹروں نے معافی مانگنے کو کہا تھا لیکن بعد میں معاملہ بہت بگڑ گیا اور کچھ ہی دیر میں بھیڑ نے اسپتال پر ہتھیاروں سمیت حملہ کردیا۔ اس حملے میں دو جونیئر ڈاکٹر سنگین طورپرزخمی ہو گئے تھے ۔ جس کے بعد جونیئر ڈاکٹر ہڑتال پر چلے گئے تھے۔
ملک میں ڈاکٹروں کی سرکردہ تنظیم آئی ایم اے یعنی انڈین میڈیکل ایسوسی ایشن نے انٹرنس اور ڈاکٹروں کے خلاف تشدد پرکنٹرول کے لیے ایک مرکزی قانون بنانے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ اس قانون کی خلاف ورزی کرنے والوں کو سات سال کی سزا ہونی چاہیے۔آئی ایم اے نے پیر کو سبھی اسپتالوں اور صحت مراکز میں غیر ضروری خدمات کو قومی سطح پربندرکھنے کا اعلان کیاہے۔ صبح 6 بجے سے او پی ڈی خدمات بند کر دی جائیں گی اور اس دوران ایمرجنسی خدمات کوبھی جزوی طورپرجاری رکھاجائے گا
دہلی میں ایمس، صفدر جنگ اسپتال، بابا صاحب امبیڈکر میڈیکل کالج اینڈ ہاسپیٹل، انسٹی ٹیوٹ آف ہیومن بیہیویر اینڈ الائیڈ سائنسز (آئی ایچ بی اے ایس)، شری دادا دیو ماتری ایوم ششو چکتسالیہ، ناردرن ریلوے سنٹرل ہاسپیٹل، ای ایس آئی سی ہاسپیٹل، چچا نہرو بال چکتسالیہ، ہندو راؤ اسپتال، بی ایم ایچ دہلی، دین دیال اپادھیائے، سنجے گاندھی میموریل اسپتال، لیڈی ہارڈنگ میڈیکل کالج اینڈ ایسو سی ایٹڈ اسپتال، ، گرو تیگ بہادر ہاسپیٹل اور گرو گووند سنگھ ہاسپیٹل سمیت دوسرے اسپتالوں میں ڈاکٹروں کی ہڑتال سے مریضوں کو کافی دشواری پیش آرہی ہے ۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here