انٹرنینشنل کرکٹ سے یووراج نے لی بدائی۔ کہا کرکٹ کو دیا اپنا خون

۔سنیاس لینے کے لئے مناسب وقت ہے کہا یووراج سنگھ نے
ہندوستانی کرکٹ میں یووراج وہ واحد کھلاڑی ہیں جنھوں نے کینسر جیسے موذی مرض کے ساتھ بھی برابر سے جنگ لڑی اور کرکٹ میں بھی اپنے جنگجو انداز کے لئے جانے جاتے ہیں ۔ٹیم انڈیا کے قدآور آل راؤنڈر یوراج سنگھ نے اچانک ہی بین اقوامی کرکٹ سے سنیاس لینے کے فیصلے نے پوری دنیا کو حیران کردیا ہےبہترین بلے بازی اور جادوئی اندازمیں کرکٹ کھیلنے میں ان کا قد بہت بلند ہے حالانکہ ۱۹ سال کرکٹ میں اپنی بہترین کارکردگی اور شاندار کیریر کے بعد وہ الوداع کہتے ہوئے بہت جزباتی نظر آئے راج سنگھ نے اپنے کیرئیر کا آغاز سوربھ گنگولی کی کپتانی میں سال 2000 میں نیروبی میں کیا تھا۔ تب کینیا کے خلاف ون ڈے مقابلہ میں ان کی بیٹنگ نہیں آئی تھی۔ یوراج نے اپنا آخری ون ڈے دو سال پہلے 30 جون 2017 کو ویسٹ انڈیز کے خلاف کھیلا تقریبا 19 سال پر محیط اپنے کیرئیر کو الوداع کہنے کے دوران یوراج بیحد جذباتی نظر آئے۔ انہوں نے بتایا کہ سنیاس کے فیصلہ کو لے کر انہوں نے سچن تیندولکر اور ظہیر خان سے بات کی تھی۔ ان دونوں نے ہی کہا کہ یہ پوری طرح سے تمہارا فیصلہ ہے۔ یہ تمہیں طے کرنا ہے کہ کب سنیاس لینا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مجھے ریشبھ پنت میں اپنی جھلک دکھائی دیتی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest

RSS
Follow by Email
Facebook
Twitter
Pinterest
LinkedIn
Instagram