ڈبلو ایچ او نے جاری کیں ہدایات۔جانئے کیا کیا کرنا چاہئے اور کیا نہیں

ڈبلو ایچ او نے جاری کیں ہدایات۔جانئے کیا کیا کرنا چاہئے اور کیا نہیں
اس وقت پوری دنیا جس طرح کرونا کے خوف سے گزر رہی ہے اسمیں صرف احتیاطی تدابیر ہی کام کرسکتی ہیں ڈبلو ایچ او نے اس متعدی بیماری کے بارے میں کئی بار گائڈ لائین جاری کی ہیں اور کچھ افواہوں پر بھی خاص طور پر بتایا ہے کہ کچھ ایسے واہمہ ہیں جو کرونا کے لیکر پھیل رہے ہیں کچھ لوگ یہ سمجھ رہے ہیں کہ گرم مملاک میں یہ نہیں پھیلتا جبکہ یہ صرف اندھا عقیدہ ہے COVID-19 ہر قسم کے ماحول میں پھیلتا ہے۔وائرس گرم اور امس والے ماحول سمیت سبھی علاقوں میں پھیلتا ہے۔ ڈبلو ایچ او کا کہنا ہے کہ صرف بار بار ہاتھ دھونے سے اس کو پھیلنے سے روکاجاسکتا ہے
موسم کا وائرس پر کوئی اثر نہیں۔سردی کے موسم کا کورونا وائرس سے کوئی لینا دینا نہیں ہے۔ یہ لوگوں کا متھ ہے کہ موسم نئے کورونا وائرس یا دیگر بیماریوں کو مار سکتا ہے۔ لوگوں کے جسم کا نارمل ٹیمپریچر(درجہ حرارت)36.5°C سے 37°C تک رہتا ہے۔ اس لئے اپنی صفائی پر زیادہ سے زیادہ دھیان دینا ضروری ہے۔اس کے علاوہ نہانے کے لئے بھی مناسب گرم پانی کا استعمال کریں ۔بہت گرم پانی ضروری نہیں
کچھ لوگوں کی یہ سوچ ہے کہ
کورونا وائرس مچھروں سے بھی پھیل سکتا ہےلیکن ابھی تک اس بات کا کوئی ثبوت نہیں ہے کہ کورونا وائرس مچھروں سے بھی پھیل سکتا ہے۔ یہ ایک ہوا میں پھیلنے والا وائرس ہے جو سانس کے ذریعے پھیلتا ہے۔ جب ایک اس وائرس سے متاثر ہ شخص کھانستا یا چھینکتا ہوتو اس کے سانس کے ساتھ وائرس دوسرے تک پہنچتا ہے۔اس سب سے بچنے کا بس ایک ہی طریقہ ہے کہ گھر میں رہیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *