ا رملا ماتونڈکر کی جان کو خطرہ ۔ ریلی میں بی جے پی کے ورکرس کا ہنگامہ

الیکشن میں ہنگامے ہونا تو ضروری ہے ورنہ الیکشن کا مزہ ہی نہیں آتا مگر اس بار مودی کے چیلے اپنی حد پار کر رہے ہیں وہ کسی کو ریلی نہیں کرنے دیتے کسی کو تقریر کرنے نہیں دے رہے اب بھلا ارملا ماتونڈ کر کی ریلی میں جلسے کی جگہ کو لے کر اتنا ہنگامہ کرنے کی کیا ضرورت ہے
لوک سبھا حلقہ کی کانگریسی امیدوار اداکار اُرمیلا ماتونڈکر کی ایک ریلی میں بی جے پی اور کانگریس کے ورکروں میں جھڑپ ہوئی ہے،اس جلسہ کو بطور امیدوار خطاب کررہی تھیں،تب یہ واقعہ پیش آیا ہے۔،  کہ بوریولی ریلوے اسٹیشن کی مغربی سمت تصادم اُس وقت پیش آیا ،جب اُرمیلا جم غفیر سے خطاب کررہی تھیں اوربی جے پی کے چند ورکروں نے جلسہ کے مقام کو لیکر اعتراض کیا۔بی جے پی ورکرس مودی مودی کے نعرے لگانے لگے ۔اس کے جواب میں کانگریسیوں نے ’’مودی چورہے‘‘کے نعرے لگائے ۔ اُرمیلا ماتونڈکر کی تقریر کے دوران دونوں پارٹیوں کے ورکرس میں تصادم ہوگیا اور وہ آزادنہ طورپر ایک دوسرے کو ڈھکیلنے لگے اور کچھ دیر بعد ان کے درمیان لات اور گھونسیں چلنے لگے ،جس سے افراتفری پھیل گئی ارملا نے اپنی تقریر میں کہا کہ ملک میں خواتین کی مودی راج میں کوئی عزت نہیں ہیں اور آج کا واقعہ اس کا جیتا جاگتا ثبوت ہے ،اور بے باکی سے کہا کہ وہ بی جے پی کے ذریعہ طاقت کے استعمال سے ڈرنے والی نہیں ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest