طلاق ثلاثہ بل:این ڈی اے میں گھمسان، کانگریس اپنی ضدپرقائم، جے ڈی یوکا بھی ووٹنگ نہ کرنے کا اعلان

نئی دہلی:مرکزی سرکار آج راجیہ سبھا میں تین طلاق بل پیش کرے گی۔ لوک سبھا میں یہ بل پاس ہوگیا ہے۔ لیکن سرکار نے سامنے اس بل کو راجیہ سبھا میں بھی پاس کرانے کا چیلنجز ہیں۔ راجیہ سبھا میں اپوزیشن کے پاس اکثریت ہے، یہی وجہ ہے کہ مودی سرکار کے لیے مشکلوں کا پہاڑ ہے۔ کانگریس سمیت دیگر اپوزیشن پارٹیوں کا مطالبہ ہے کہ بل کو سلیکٹ کمیٹی کے پاس بھیجا جائے۔ اس ایشو پر انہوں نے راجیہ سبھا کے چیئرمین کو چھٹی بھیجی ہے۔ راجیہ سبھا میں بل دوپہر دو بجے پیش ہوسکتا ہے۔
تفصیلات کے مطابق راجیہ سبھا میں طلاق ثلاثہ بل دوسری مرتبہ دو بجے کے بعد پیش کیا جائے گا ۔لوک سبھا سے مسلسل دوسری مرتبہ بل منظور ہوچکاہے تاہم راجیہ سبھا سے سال گذشتہ سے بھی یہ بل منظور نہیں ہوسکاتھا لیکن اس بار بھی یہ راہ آسان نہیں ہے۔ بی جے پی جہاں اس بل کو منظور کرانے کیلئے بضد ہے وہیں کانگریس نے بھی اسے نہ منظور ہونے دینے کیلئے مکمل تیاری کرلی ہے اس بل کو لے کر بی جے پی اور کانگریس دونوں نے اپنے ارکان کو پارلیمنٹ میں موجود رہنے کے لئے وہپ جاری کیا ہے۔دلچسپ اور مزے کی بات یہ ہے کہ این ڈی اے کے ساتھ رہے جے ڈی یو بھی اس بل کی مخالفت کررہی ہے۔ جے ڈی یو نے راجیہ سبھا میں ووٹنگ کے دوران حصہ نہ لینے کا اعلان کیا ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest

RSS
Follow by Email
Facebook
Twitter
Pinterest
LinkedIn
Instagram