ترنگا گیت

جشن یوم آزادی مل کے ہم منائیں گے
گیت اپنے بھارت کی شان میں سنائیں گے

پھر بہار آئی ہے دلفریب موسم ہے
اب نگر نگر دیکھو اک خوشی کا عالم ہے
اس حسین منظر کو کیسے ہم بھلائیں گے

جشن یوم آزادی مل کے ہم منائیں گے
گیت اپنے بھارت کی شان میں سنائیں گے

پروتوں سے بھی اونچا سلسلہ ہمارا ہے
آندھیوں سے ٹکرائیں حوصلہ ہمارا ہے
ولولہ زمانے کو اپنا ہم دکھائیں گے

جشن یوم آزادی مل کے ہم منائیں گے
گیت اپنے بھارت کی شان میں سنائیں گے

توڑ کر غلامی کی بیڑیوں کو آئے ہیں
خواب تھے جو ماضی کے سچ وہ کر دکھائیں ہیں
کیا وطن پہ گزری ہے سب کو ہم بتائیں گے

جشن یوم آزادی مل کے ہم منائیں گے
گیت اپنے بھارت کی شان میں سنائیں گے

ہم نے دیش کی خاطر اپنا خوں بہایا ہے
اپنے عزم سے ہم نے ملک کو بچایا ہے
مل کے دیش کا جھنڈا آج سب اُٹھائیں گے

جشن یوم آزادی مل کے ہم منائیں گے
گیت اپنے بھارت کی شان میں سنائیں گے

مائیں اپنے بچّوں کا حوصلہ بڑھاتی ہیں
ملک کی محبت میں لوریاں سناتی ہیں
دیش کے میرے بچّے آسماں پہ چھائیں گے

جشن یوم آزادی مل کے ہم منائیں گے
گیت اپنے بھارت کی شان میں سنائیں گے

خار سارے گلشن کے آج ہم ہٹا دیں گے
دیپ اک محبت کا مل کے ہم جلا دیں گے
ساتھ مل کے الفت سے دیش کو سجائیں گے

جشن یوم آزادی مل کے ہم منائیں گے
گیت اپنے بھارت کی شان میں سنائیں گے

محمد عادل ؔ فراز
ہلال ہائوس4/114
نگلہ ملّاح سول لائن علی گڑھ
علی گڑھ
یوپی
موبائل:09358856606
Email:mohdadil75@yahoo.com

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest