شہادت پر کل جماعتی تعزیتی اجلاس کا ہوا انعقاد

کل جماعتی تعزیتی اجلاس ہے تو ویرساورکر کابینہ کیوں؟
الحاج محمد اکرام انصاری کے اعتراض پر کانگریس پارٹی نے کنارہ کشی

برھانپور:شیوسینا کے ضلع صدر پنڈت آشیش شرما کے ذریعے آج 17فروری 2019اتوار کو شام 4بجے پلواما کے 42شہداء کو خراج عقیدت پیش کرنے اور مرکزی سرکار سے اس معاملے میں سخت کارروائی کرنے کے مطالبے کو لیکر ایک کل جماعتی تعزیتی اجلاس کا انعقاد کمل تراہے پر کیاگیاجس میں میئر انیل بھونسلے ،سابق میئر اتول پٹیل ،بی جے پی ضلع صدر وجے گپتا،معین اختر انصاری ،دلیپ شراف، سابق ایم ایل اے رام داس شیوہرے اور منجو دادو،جگدیش کپور،محترمہ اوما کپور،ترونہ بھٹ ،محترمہ انجلی گڑھے،قاری شکیل عالم (سنی تنظیموں کا نمائندہ )مولانا شکیل چندر کلا(علماء اور امام کی طرف سے نمائندہ )بوہرہ سماج کی جانب سے ملا شبیر صاحب ،شیوسینا کی طرف سے آشیش شرما ،سنت سماج کی جانب سے بالیامہاراج ،شیعہ برادری کی جانب سے عابد قزلباش المعروف جانی پہلوان ،اقلیتی مورچہ بی جے پی سے ہدایت اللہ، وی ایچ پی کی طرف سے مسٹر پی سگندھی کے علاوہ دیگر نمائندگان نے شرکت کرکے تعزیتی اجلاس کو خطاب کیا اور پلواما کے 42شہیداء کو خراج عقید پیش کرتے ہوئے حکومت ہند سے سخت سے سخت کارروائی کرنے کامطالبہ کیا،اس کل جماعتی پروگرام میں بی جے پی کابینہ ہونے پر سابق ایم ایل اے رام داس شیوہرے نے کہاکہ بی جے پی کابینہ نہیں لگنا چاہیے ،اس پر بی جے پی کا بینہ ہٹالیاگیاوہیں کسی ہندوتنظیم کے ذریعے ویرساور کرکے فوٹو کے ساتھ ایک بینر لگایا گیاتھا،جس میں یہ تحریر تھا کہ ہم آپ کا خیرمقدم کرتے ہیں اس پر کانگریس رہنما الحاج محمد اکرام انصاری نے اپنا اعتراض پیش کیاکہ کل جماعتی تعزیتی اجلاس ہے تو یہ بینر اور خیر مقدم کاجملہ کیوں؟الحاج محمد اکرام انصاری گبو سیٹھ کے اس اعتراض پر کانگریس پارٹی کی طرف سے آئے نمائندوں میں سے سابق پارلیمنٹری سیکریٹری ڈاکٹر فیروزہ علی ،کانگریس اقلیتی مورچہ ضلع صدر سیّد مشتاق حسین نے اس کل جماعتی تعزیتی اجلاس سے کنارہ کشی اختیار کرکے چلے گئے اور بغیر کانگریس کے کل جماعتی تعزیتی اجلاس منعقد ہوا،پروگرام کی خاص بات یہ تھی کہ مقررکی تقریر پرتالیاں بجانے کی ممانعت تھی،نظامت کے فرائض منوج لدھوے نے انجام دی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest