تلنگانہ میں ٹیچر کی غضب کی لاپرواہی ۔ ۹۹ نمبرحاصل کرنے والی طالبہ کو0

کیا ایسا ممکن ہے کہ کسی طالبہ کے نمبر ۹۹ آرہے ہوں اور استاد اس کو صرف0نمبر دے رہا ہو ۔ہم نے تو ایسا غضب ہوتے نہ دیکھا نہ سنا لیکن تلنگانہ میں ایسا ہوا ہے انٹر میڈیٹ کی طالبہ کے 99نمبر آرہے تھے لیکن لاپرواہی میں ٹیچر نے اس کو صرف 0نمبر ہی دئے حیرت کی بات یہ ہے کہ کاپی کی دوبارہ جانچ میں بھی یہ غلطی پکڑی نہیں گئی اور ری چیکنگ میں بھی یہی نمبر رہے ۔پرائیوٹ اسکول کی ٹیچر اوما دیوی نے بارہویں جماعت کی طالبہ کے پرچے کی جانچ کی ۔اوراس طالبہ کو 99 مارکس حاصل ہونے پر 0 مارکس دیئے ۔ بورڈ نے قبائلی بہبودی اسکول میں خدمت انجام دینے والے اس وجے کمارکو بھی معطل کردیاہے۔ جس نے پرچے کی جانچ کے دوران اوما دیوی کی غلطی کی نشاندہی نہیں کی اور طالبہ کو 0 مارک ہی رہنے  دئے ۔اسکول انتظامیہ نے ٹیچر کو ہٹا تو دیاہے مگر سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ کیا اساتذہ کو ایسی لاپرواہی ذیب دیتی ہے اور ایسے اساتذہ کیا کسی کا مستقبل بنا سکتے ہیں؟؟؟؟

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest