تم کو یقیں نہ آئے تو تاریخ دیکھ لو- ظالم کے ظلم کا ہمیں رہتا ہے ڈر کہاں

بزم اظہار کا احتجاجی طرحی مشاعرہ منعقد سڑکوں پہ ہم کو آئے مہینے گذر گئے یہ حکمران ملنے کو آئے

Read more