فوج کا سخت پیغام،بندوق اٹھانے والے مارے جائیںگے

سری نگر: سری نگر میں قائم فوج کی۱۵؍ویں کور کے جنرل آفیسر کمانڈنگ یعنی جی او سی لیفٹیننٹ جنرل کنول جیت سنگھ ڈھلون نے کہا کہ وادی کشمیر میں بندوق اٹھانے والے ہر نوجوان کو مارا جائے گا۔ انہوں نے کشمیری دہشت گردوں کو ہتھیار چھوڑ کر قومی دھارے میں شامل ہونے کا مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ سرکار ایک موثر سرینڈر و بازآبادکاری پالیسی بنانے میں مصروف عمل ہے۔لیفٹیننٹ جنرل ڈھلون نے باتیں منگل کو یہاں سی آر پی ایف کے آئی جی آپریشنز ذوالفقار حسن اور آئی جی کشمیر سویم پرکاش پانی کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہیں۔انہوں نے والدین بالخصوص مائوں سے اپیل کی کہ وہ اپنے بچوں سے ہتھیار چھوڑ کر قومی دھارے میں شامل ہونے کی اپیل کریں۔ انہوں نے کہا کہ میں یہ جانتا ہوں کہ کشمیری سماج میں مائیں ایک اہم رول کردار کررہی ہیں۔ان کا کہنا تھا ‘میں آپ کے ذریعے کشمیر کی تمام ماؤں سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ اپنے بچوں جنہوں نے ہتھیار اٹھائے ہیں، سے ہتھیار چھوڑ کر قومی دھارے میں شامل ہونے کے لئے کہیں۔ میں یہ جانتا ہوں کہ کشمیری سماج میں مائیں ایک اہم کردار ادا کررہی ہیں۔ کشمیر میں جس کسی نے بندوق اٹھائی ہے، اس کو ہلاک کیا جائے گا۔ جو خودسپردگی اختیار کرے گا وہ بچ جائے گا۔انہوں نے کہا ‘مہربانی کرکے آپ اپنے بچوں سے کہیں کہ وہ خودسپردگی اختیار کریں۔ حکومت کی جانب سے ایک بہت اچھی سرینڈر و بازآبادکاری پالیسی بنائی جارہی ہے۔ اس کا مقصد ہے کہ بھٹکے ہوئے نوجوان خودسپردگی اختیار کرکے اپنی زندگی آرام سے گذاریں۔ جس کسی نے بندوق اٹھائی ہے اس کو مارا جائے گا۔ خودسپردگی اختیار کرنے والے نوجوان بچ جائیں گے۔چنار کور کے جی او سی نے دعوی کیا کہ وادی کشمیر میں گذشتہ چند ماہ کے دوران دہشت گردوں کی صفوں میں شمولیت کے رجحان میں کمی آئی ہے۔ ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ آپ نے بندوق اٹھائی تو مارے جائو گے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *