برفانی تودے کے نیچے زند ہ دفن ہونے والے دو شکاریوں کی لاشیں بر آمد

سری نگر: جموں وکشمیر کے سرحدی ضلع کپواڑہ کے لولاب کے جنگلات میں برفانی تودے کے نیچے زند ہ دفن ہونے والے دو شکاریوں کی لاشیں بر آمد کی گئی ہیں۔ سرکاری ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ وادی کے سرحدی ضلع کپوارہ کے لولاب کے جنگلات میں بدھ کے روز دو شکاری برفانی تودے کی زد میں آکر زند ہ دفن ہوئےجبکہ ایک شکاری گھر واپس لوٹ آیا اور اس آفت سے لوگو ں اور پولیس کو آگاہ کیا۔ انہوں نے بتایا کہ پولیس اور فوجی کی ۱۸؍آر آر سے وابستہ اہلکاروں نے راحتی کارروائی شروع کرتے ہوئے جمعرات کو دو زندہ دفن ہوئے شکاریوں کی لاشیں برآمد کیں۔ انہوں نے بتایا کہ بدھ کی صبح کپواڑہ سے کم وبیش ۴۰؍ کلومیٹر دور رنگ وارنو جنگلات میں شکار کرنے کی غرض سے نکلے تین افراد جن میں دو برادران بھی شامل تھے، ایک برفانی تودے کی زد میں آکر زندہ دفن ہوئے تھے۔مہلوک شکاریوں کی شناخت محمد یونس اور مام الدین حجام کے طور پر ہوئی ہے۔انہوں نے کہا ‘تاہم ان میں سے عبدالر شید حجام ولد محمد یونس حجام نامی ایک شکاری برفانی تودے سے بچ نکل کر ایک نزدیکی گاؤں میں پہنچنے میں کامیاب ہوا جہاں اس نے مقامی لوگوں اور پولیس کواس آفت کے بارے میں آگاہ کیا۔دریں اثنا ایس ایس پی کپواڑہ امبارکر شری رام دنکر نے کہا کہ لاپتہ شکاریوں کی لاشوں کو پایا گیا۔قابل ذکر ہے کہ سال گزشتہ کے ماہ مارچ میں لولاب کے ہی درد پورہ علاقے میں ایک برفانی تودے کی زد میں آکر تین افراد از جان ہوئے تھے جن کی لاشوں کو چھ روز بعد بر آمد کیا گیا تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest

RSS
Follow by Email
Facebook
Twitter
Pinterest
LinkedIn
Instagram