سدھو نے مودی پر کی سخت تنقید: دیکھئیےکیا کہا؟؟

پنجاب کےوزیر اور کانگریس کے نمایا ں تشہرکار نوجوت سنگھ سدھو نے ایک انتخابی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے اپنے انداز میں جم کر چوکے چھکے لگائے ۔انہوں نےوزیر اعظم نریندر مودی پر تنقید کی اورایک الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ مسٹر مودی کو لگتا ہے کہ 2014 کے پہلے ہندوستان میں صرف ایک چائے کی دکان تھی۔ انہوں نے کہا مسٹر مودی کانگریس کے عظیم لیڈروں پر نکتہ چینی کرتے وقت بھول جاتے ہیں کہ انہوں نے ہی ہندوستان کو خلا میں کامیابی دلائی اور کمپیوٹر انقلاب جیسی متعدد سوغاتیں دیں ہیں۔مسٹر سدھو نے مسٹر مودی اور بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) پر ایشوزسے ہٹ کر انتخابی تشہیر کرنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا بی جے پی انتخابی پلیٹ فارموں سے جھوٹ پھیلا رہی ہے۔ انہوں نے کہا یہی وجہ ہےکہ مودی نوٹ بندي، گڈ س اینڈ سروس ٹیکس (جی ایس ٹی)، روزگار، کسان، غربت کی بات نہیں کرتے ہوئے مسٹر مودی قوم پرستی کی پناہ میں چلے گئے ہیں۔ مسٹر سدھو نے مسٹر مودی پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا گزشتہ پانچ برسوں میں آئینی اداروں کا سیاسی استعمال کیا گیا، کچھ صنعت کاروں کی ذاتی یونٹس کو فائدہ پہنچانے کے مقصد سے مسلسل مرکزی یونٹس کو ختم کیا جا رہا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest

RSS
Follow by Email
Facebook
Twitter
Pinterest
LinkedIn
Instagram