شاہین باغ ۔ہائی کورٹ نے مظاہرین کو ہٹانے کے لئے پولیس کو سونپ دیا اختیار

شاہین باغ ۔ہائی کورٹ نے مظاہرین کو ہٹانے کے لئے پولیس کو دی ہری جھنڈی دے دی ہے۔آج شاہین باغ کی خواتین کو مہینہ ہوگیا ہے اس کڑکتے ہوئے جاڑے میں رات دن سڑکوں پر بیٹھی ہوئی ہیں ۔اب جبکہ پوری دنیا میں ان کے عزم اور حوصلہ کی سراہنا کی جارہی ہے اور داد دی جارہی ہے اب ہائی کوررٹ نے ان کو ہٹانے کا کام اس پولیس کو دیدیا ہے جس پر جامعہ اور دلی کے لوگ بلکل بھروسہ نہیں کرتے۔شاہین باغ علاقہ میں گاڑیوں کی آمد ورفت شروع کرنے کے مطالبہ کو لے کر داخل کی گئی عرضی پر دہلی ہائی کورٹ نے پولیس کو حکم دیا کہ قانون وانتظام اور مفاد عامہ کو دیکھتے ہوئے کارروائی کی جائے۔ ساتھ ہی عدالت نے یہ بھی کہا کہ لوگوں کی پریشانی دیکھتے ہوئے قانون وانتظام کے تحت پولیس کبھی بھی روڈ خالی کرا سکتی ہے۔ آپ کو بتا دیں کہ شاہین باغ علاقے میں شہریت ترمیمی قانون کے خلاف جاری احتجاج کے مدنظر دہلی میں سریتا وہار سے کالندی کنج کے درمیان گاڑیوں کی آمد ورفت کئی دنوں سے بند ہے جس سے اس علاقے کے آس پاس رہنے والے لوگوں کو دقتوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔لیکن اب لوگ کافی نحد تک عادی بھی ہوگئے ہپیں وہاں کے دکاندار بھی دکانیں بند کرکے ان خواتین کا ساتھ دے رہے ہیں ۔اس وقت بھی وہاں خالی کرانے کے لئے پولیس موجود ہے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *