اسکولوں کے طالب علم بھی ہوئے احتجاج میں شامل۔انقلاب زندہ باد کے نعروں سے گونجے زمین و آسمان

جامعہ ملیہ ا

جامعہ ملیہ اسلامیہ نے جس انقلاب کا بگل بجایا تھا آج پوری دنیا اس انقلاب میں شامل ہوگئی ہے ۔آج اس احتجاج کے 11دن بعد بھی یہ احتجاج اتنا ہی تازہ دم ہے جتنا پہلے دن تھا  ۔نہ جانے کتنی ہی تنظیمیں اور کتنے ہی ادارے اس میں شامل ہوگئے ہیں ۔اسکولوں کے طالب علم بھی اس احتجاج میں شامل ہیں ۔آج نیو ہورائزن اسکول نظام الدین کے سابق طالب علم اور موجودہ طالب علموں نے بھی جامعہ پروٹیسٹ میں اپنی موجودگی درج کرائی ۔ایک جم غفیر تھا طالب علموں کا جو ایک سیلاب کی طرح بڑھتا چلا جارہا تھا ۔لڑکیاں بینر اور پلے کارڈ اٹھاکر جوش و خروش سے شامل تھیں ۔ان کے ساتھ ان کے اساتذہ بھی شامل تھے ۔انقلاب زندہ باد اور جامعہ زندہ باد کے فلک شگاف نعروں سے پوری سڑک گونج رہی تھی ۔اس پورے پروٹیسٹ کو کوئی لیڈ نہیں کر رہا تھا ۔لیکن سبھی طالب علمون میں جو تال میل تھا وہ غضب تھا،سلمان اور آصف نام کے بچے تھے جو نعرے لگواتے تھے ۔ثانیہ نام کی بچی تھی جس کی آوازبے حد بلند تھی ۔اور بھی جانے کتنے ہی طالب علم تھے جو جوق درجوق چلے آتے تھے اور ساتھ ساتھ نعرے لگواتے تھے ۔سچ جانئے ایسا احتجاج ایسا تال میل ایسا اتفاق نہ دیکھا نہ سنا ۔آج ان طالب علموں کو کسی قائد کسی لیڈر کی ضرورت نہیں ہے ہر بچہ ہر طالب علم اپنے آپ میں قائد ہے۔انقلاب زندہ باد

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *