ہندوستان بنا دنیا کا بلند ترین مجسمہ رکھنے والا ملک

وزیراعظم مودی نے سردار بلبھ بھائی پٹیل کے 182 میٹر بلند مجسمہ ’’اسٹیچو آف یونٹی‘‘ كو قوم کو معنون کیا

وزیراعظم نریندر مودی نے سردار بلبھ بھائی پٹیل کے جنم دن پر دنیا میں سب سے اونچا ان کا مجسمہ ’’اسٹیچو آف یونٹی ‘‘ کا افتتاح کیا۔ مودی نے اس موقع پر ’دیش کی ایکتا‘ زندہ باد، کا نعرہ لگاتے ہوئے ’’ایک بھارت سریشٹھ بھارت‘‘ کے لیے پٹیل کے دکھائے راستے پر چلتے رہنے کا عزم کیا۔ مودی نے کانگریس سمیت اپوزیشن پارٹیوں پر حملہ کرنے سے باز نہیں رہے۔ یعنی انہوں نے اس موقع پر اپوزیشن پارٹیوں پر جم کر حملہ بھی کیا۔
تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم نریندر مودی نے آج اپنے آبائی صوبہ گجرات کے نرمدا ضلع میں كیوڈيا میں واقع سردار سروور ڈیم سے تقریبا تین کلومیٹر کے فاصلے پر سادھو جزیرے پر تیار سردار بلبھ بھائی پٹیل کے 182 میٹر بلند مجسمہ اسٹیچو آف یونٹی كو قوم کو معنون کیا،اس کے ساتھ ہی یہ چین کے اسپرنگ فیلڈ بدھ کی 153 میٹر بلند مجسمہ کو باضابطہ طور پر پیچھے چھوڑتے ہوئے دنیا کا بلند ترین مجسمہ بن گیا۔ اس کی وسعت کا اندازہ اسی بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ صرف اس کے چہرے کی اونچائی ہی سات منزلہ عمارت کے برابر ہے۔ اس کے ہاتھ 70 فٹ طویل ہیں جبکہ پاؤں کے نچلے حصے کی اونچائی 85 فٹ ہے۔تقریبا تین ہزار کروڑ روپےکے اخراجات سے قریب ساڑھے تین سال میں بن کر تیار ہونے والے اس مجسمہ کی اونچائی نیویارک واقع اسٹیچو آف لبرٹی سے بھی تقریباً دو گنی ہے۔ اسے بنانے کا اعلان گجرات کے سابق وزیر اعلی کے طور پر مسٹر مودی نے سال 2010 میں کیا تھا۔ اس کام کیلئے ایل اینڈ ٹی کمپنی کو اکتوبر 2014 میں مقرر کیا گیا تھا. کام کا آغاز اپریل 2015 میں ہوا تھا۔اس میں 70 ہزار ٹن سیمنٹ، تقریبا 24000 ٹن اسٹیل، 1700 ٹن تانبہ اور اتنا ہی كانسہ لگا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *