سلام

جب کبھی بگڑے ہوئے دنیا کے تیور دیکھنا
یا حسینؑ ابنِ علیؑ اک بار کہہ کر دیکھنا

خیمۂ شبیرؑ کے انوار آئیں گے نظر
تم شبِ عاشور میں شمعیں بجھا کر دیکھنا

کس طرح سوکھے گلوں نے جنگ جیتی ظلم سے
کربلا میں کس طرح ہارے ہیں خنجر دیکھنا

جو بہائے جا رہے ہیں اشک غم میں شاہ کے
حشر کے میداں میں ہوں گے لعل و گوہر دیکھنا

کہہ رہی ہے یہ شہادت اصغرِ بے شیر کی
موت کو بھی دیکھنا تو مسکرا کر دیکھنا

جگمگاتا ہے لہو میں جسمِ ہمشکلِ رسولؐ
نور کہتے ہیں کسے یہ ماہ و اختر دیکھنا

کیا اسی سر کو جھکانے کی تمنا تھی تجھے
اے سوالِ بیعتِ فاسق سناں پر دیکھنا

قید خانے کے در و دیوار روشن ہو گئے
عابدِ بیمار کے سجدوں کا منظر دیکھنا

کہہ کے یہ عباسؑ دریا سے چلے رُخ موڑ کر
تجھ کو ٹھکرا ہی دیا تو کیا پلٹ کر دیکھنا

عشق کرتے ہیں محمدؐ اور ان کی آل سے
سرخرو ہوں گے وفاؔ ہم روزِ محشر دیکھنا

سید بصیر الحسن وفاؔ نقوی
ہلالؔ ہائوس
4/114نگلہ ملاح
سول لائن علی گڑھ یوپی
موبائل:9219782014
Syed Baseerul Hasan Wafa Naqvi
Hilal House
4/114 Nagla Mallah Civil line Aligarh
UP
Mob:9219782014

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *