راج ٹھاکرے کا وزیراعظم مودی پر بڑا حملہ

الیکشن کی وجہ سے پلوامہ جیسے مزید حملے کروا سکتے ہیں

نئی دلی: اب تک تو اپوزیشن کی تمام پارٹیاں برسراقتدار مرکز کی مودی حکومت پر انگلیاں اٹھا رہی تھیں کہ وزیراعظم شہیدوں کے نام پر سیاست کررہی ہے۔ دہشت گردانہ حملے سے بھی انتخابی فائدہ حاصل کرنے کی کوشش کررہی ہے۔ اس بیچ اب مہاراشٹر نونرمان سینا کے سربراہ راج ٹھاکرے نے کہا ہے کہ مودی الیکشن میں کامیابی کے لیے کچھ بھی کرسکتے ہیں اور پلوامہ حملہ بھی ووٹرز کی ہمدردی حاصل کرنے کے لیے کیا گیا تھا۔ذرائع کے مطابق مہاراشٹر نو نرمان سینا کے سربراہ راج ٹھاکرے نے اپنی جماعت کے 13 ویں یوم تاسیس پر کارکنان سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مودی سرکار الیکشن میں فائدہ اُٹھانے کے لیے پلوامہ جیسے مزید حملے کروا سکتی ہے۔راج ٹھاکرے نے وزیراعظم نریندرا مودی کی شاطرانہ چال کا پردہ فاش کرتے ہوئے کہا کہ پلوامہ حملہ بھی بی جے پی حکومت کا ڈرامہ تھا اور 2015 میں بھی پٹھان کوٹ حملہ الیکشن جیتنے کیلئے کروایا گیا تھا۔ مودی اپنی پرانی روش پر قائم ہیں۔ ووٹرز کے لیے ان کے پاس کارکردگی نہیں جنگ ہے۔ہندو انتہا پسند رہنما نے سوال اُٹھائے کہ بھارتی فضائیہ کی کارروائی اور کارکردگی پر سوال کیوں نہیں کیا جا سکتا؟ ملک کیلئے قربانی دینے والے فوجی اہلکاروں کے بارے میں سوال کیوں نہیں کیا جانا چاہئے؟ یہ حملہ انتخاب سے قبل ہی کیوں ہوا؟ کیا ہماری انٹیلی جنس فیل ہوچکی ہے؟ اس ملک میں حکومت نام کی کوئی چیز نہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest