رافیل ہنگامہ کی وجہ سے ایوان کی کارروائی دن بھر کے لئے ملتوی

نئی دہلی:چیئرمین ایم وینکیا نائيڈو نے صبح ایوان کی کارروائی شروع کرتے ہوئے ضروری دستاویزات ایوان کے ٹیبل پر ركھوائے۔ انہوں نے مختلف جماعتوں کے ارکان کا نام پکارا اور کہا کہ ان سبھی نے مختلف معاملات پر بحث کے لئے نوٹس دیا ہے۔ چیئرمین ان سبھی سے اتفاق کرتے ہیں اور ان سبھی پر بحث کی جائے گی۔اس سے پہلے مرکزی انسانی وسائل کی ترقی کے وزیر پرکاش جاوڈیکر نے کہا کہ یونیورسٹیوں میں درج فہرست ذات و قبائل اور دیگر پسماندہ طبقات کے اساتذہ کے ریزرویشن کے معاملے پر حکومت سپریم کورٹ میں نظر ثانی کی عرضی دائر کرے گی اور یہ مسترد ہونے کی صورت میں آرڈیننس یا بل لائےگي۔اس کے بعد مسٹر نائيڈو نے وقفہ صفر چلانے کی کوشش کی تو ایوان میں حزب اختلاف کے رہنما غلام نبی آزاد بولنے کے لیے کھڑے ہو گئے۔ انہوں نے کہا کہ رافیل سودے کے بارے میں انگریزی اخبار میں کچھ شائع ہوا ہے۔ اس پر چیرمین نے کہا کہ آپ کو بولنے کی اجازت نہیں دی گئی ہے اور اس معاملے پر آپ نے کوئی نوٹس نہیں دیا ہے۔ اس سے کانگریس کے ارکان نعرے بازی کرتے ہوئے چیرمین کی نشست گاہ کی طرف بڑھنے لگے۔ ایوان میں شور شرابے کی حالت کے پیش نظر چیئرمین نے تقریبا 11 بجکر 20 منٹ پر ایوان کی کارروائی پیر تک کیلئے ملتوی کرنے کا اعلان کر دیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest