غزل

میری باتوں کوذراسمجھاکریں
بے ضرورت گھر سے نہ نکلاکریں

پہلے اپنے آپ کوپرکھاکریں
پھر کسی کی بات کا چرچا کریں

کس لئے حالات سے بھاگا کریں
آئیے حالات سے نپٹا کریں

کب تلک ہم راستہ دیکھا کریں
تم اگرناراض ہوتو کیاکریں

ماب لنچنگ ہونہیں سکتی جناب
ساتھ میں پستول گر رکھا کریں

اینٹ کا پتھر سے دیناہے جواب
دشمنانِ قوم جب حملہ کریں

مسئلے کا حل نہیں نکلے گا کیوں
اپنے اپنے طور سب سوچا کریں

امی ابا نے سکھایا ہے ہمیں
ہم کسی سے بھی نہیں دھوکا کریں

رہبر گیاوی۔۔۔۔۔۔۔گیا بہار انڈیا

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest

RSS
Follow by Email
Facebook
Twitter
Pinterest
LinkedIn
Instagram