پاکستان کی معاشی حالت انتہائی خراب ۔کیا ایک بریڈ کے لئے بوریوں میں پیسے جائنگے ؟

پاکستان کو وہاں کے لیڈران نے پوری طرح لوٹ کھسوٹ کر خالی کردیا ہے حال ہی میں سابق صدرآصف زرداری کو منی لانڈرنگ کیس میں پکڑ کر جیل میں ڈالا گیا ہے اور سابق وزیر آعظم نواز شریف پر بھی کئی کیس غبن اور ہیرا پھیری کے ہیں ۔وزیرآعظم عمران خاں اس صورت حال سے سخت پریشان ہیں انھون نے قوم کے نام خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے پاس قرض کی قسط چکانےکے ڈالر نہیں بچے ہیں ایسے میں پاکستان کہیں دیوالیہ نہ ہوجائے۔ اگر ایسا ہوا تو پاکستان کا حال وینزویلاجیسا ہوجائے گااور پاکستانیوں کو بوریوں میں پیسے بھرکرلے جانے پر روٹیاں ملیں گی۔عمران خان نے کہاکہ پاکستان میں ٹیکس سے 4 ہزار ارب روپئے سالانہ جمع کئے جاتے ہیں لیکن آدھی رقم قرضوں کی قسطیں اداکرنے میں چلی جاتی ہے۔ پی ایم عمران خان کا کہنا ہے کہ جتنی رقم بچتی ہے اس میں ملک کا خرچہ نہیں چلایا جاسکتا ہے۔پاکستان نے آئی ایم ایف سے جو 6 ارب ڈالر کا قرض لے رکھا ہے۔ قرض کی شرطوں کے تحت پاکستان کو ٹیکس بڑھانے سمیت کئی شرائط کو ماننا پڑرہا ہے۔اس لئے عوام کو ہر قیمت پر انکم ٹیکس ادا کرنا ہوگااور 30جون تک بےنامی املاک اور اکاؤنٹ کا انکشاف کرنا ہوگا نہیںکرنےوالے کی املاک ضبط کر لی جائے گی۔ عمران خان نے کہا اگر آپ ٹیکس نہیں دیتے تو ہم ملک کو آگے نہیں لے جاسکیں گے۔ 30 جون کے بعد آپ کو یہ موقع نہیں ملےگا

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest