حکومت کاملک میں متبادل ادویات کے طریق کار کو مضبوط بنانے کیلئےکمیشن کی تشکیل دینےکا فیصلہ

نئی دہلی:حکومت ملک میں متبادل ادویات کے طریق کار کو مضبوط اور شفاف بنانے کے لئے ہندوستانی طریقہ علاج کمیشن اور نیشنل ہومیو پیتھی کمیشن قائم کرنے کے لئے بل پارلیمنٹ میں پیش کرے گی۔مرکزی کابینہ نے کل اپنی میٹنگ میں ان دونوں بلوں کے مسودوں کو منظوری دے دی۔ وزیر اعظم نریندر مودی کی صدارت میں کابینہ کی میٹنگ کی تفصیلات بتاتے ہوئے وزیر قانون روی شنکر پرساد نے جمعہ کو صحافیوں کو بتایا کہ مرکزی انڈین میڈیکل کونسل کی جگہ اب نیا ریگولیٹری ہندوستانی طریقۂ علاج کمیشن قائم کیا جائے گا جس کے تحت چار سو خود مختار بورڈ بنائےجائیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ کمیشن آیور ویدک، یونانی طبی طریقہ سے جڑے معاملات کو کنٹرول کرے گا اور اس کو مزید شفاف بنائے گا۔ اسی طرح مرکزی ہومیوپیتھی کمیشن کی جگہ مرکزی ہومیوپیتھی کمیشن کا قیام عمل میں آئے گا، جس کے تحت تین خود مختار بورڈ ہوں گے۔ اس میں بھی طالب علموں کے داخلہ کے لئے بھی مشترکہ امتحان ہو گا اور پھر ڈاوكٹروں کو لائسنس مل جائے گا۔ اساتذہ کے لئے اہلیت کا امتحان دیناہو گا۔ان دونوں کمیشن کا مقصد متبادل ادویات کے طریق کار میں معیار لانا اور مریضوں کو بہتر سہولیات فراہم کرنا ہے۔کمیشن ہندوستانی طریقہ علاج کے طالب علموں کے داخلے کے لئے علیحدہ جوائنٹ ٹسٹ منعقد کرے گا، اس کے بعد ہی انہیں لائسنس ملے گا۔ اساتذہ کے لئے بھی اہلیت ٹسٹ ہو گا اور اس کے بعد ان کی تقرری ہوگی اور ترقی ہوگی۔ یہ کمیشن بھی نیشنل میڈیکل کمیشن کی طرح ہو گا۔انہوں نے بتایا کہ ہندوستانی طریق کار سے علاج کرنے والے لوگوں کے مفادات کا خیال رکھا جائے گا اور طبی اداروں کو تسلیم کرنے کے لئے بھی ایک بورڈ ہوگا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest