نیشنل کانفرنس نے جموں وکشمیر میں الیکشن کے اعلان کا خیرمقدم کیا ہے

سری نگر: مرکزی سرکار کی طرف سے جموں وکشمیر میں اسمبلی الیکشن کرانے کے اعلان کا خیر مقدم کرتے ہوئے نیشنل کانفرنس نے کہا کہ اس کیلئے پہلے ساز ماحول بنانا انتہائی ضروری ہے۔ پارٹی کے معاون جنرل سکریٹری ڈاکٹر شیخ مصطفےٰ کمال نے پارٹی ہیڈکوارٹر نوائے صبح کمپلیکس میں پارٹی عہدیداروں اور کارکنوں کے ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہاہے کہ اسمبلی انتخابات سے قبل سازگار ماحول قائم کرنا گورنر انتظامیہ خصوصاً مرکز کی ذمہ داری ہے۔ڈاکٹر کمال نے کہا کہ ایسا ماحول قائم کرنے کیلئے قتل و غارت، انکاؤنٹروں، کریک ڈاؤنوں اور گرفتاریوں کا سلسلہ فوری طور پر بند کیا جانا چاہئے۔ گزشتہ۳؍سال سے کشمیر کا ہر گھر اور ہر بستی فوج کے سائے میں ہے، خوف و دہشت کا ماحول ختم کرنے کیلئے فوج کو بارکوں میں بھیجا جانا چاہئے۔ڈاکٹر کمال نے کہا کہ جمہوری حکومت کے قیام کیلئے ضروری ہے کہ عوام بڑھ چڑھ کا اس کے عمل میں حصہ لیں لیکن اگر حالات جوں کے توں رہے تو ایسا ہوپانا مشکل ہے۔ انہوں نے کہا کہ پی ڈی پی بھاجپا حکومت کے قیام سے لیکر آج تک گزشتہ۴ ؍ سال سے مسلسل طور کشمیری قوم اضطراب میں ہے۔ وادی اقتصادی اور معیشی بدحالی کی شکار ہوگئی ہے۔ عوامی حکومت کی عدم موجودگی حالات کی مسلسل خرابی کا سبب بن رہی ہے۔ کوئی دن ایسا نہیں جاتا جب انکاؤنٹر، کارڈن اینڈ سرچ آپریشنز، گرفتاریوں اورپُرتشدد جھڑپیں رونما نہیں ہوتیں۔ کوئی علاقہ ایسا نہیں جو حالات کی خرابی سے متاثر نہیں ہوا ہے۔ڈاکٹر کمال نے نئی دلی میں بیٹھے تھنک ٹینک پر زور دیا کہ وہ سرجوڑ کر بیٹھ کے کشمیر میں جاری رکھی گئی سخت گیر پالیسی کے منفی نتائج کا احاطہ کریں اور فوری طور پر افہام و تفہیم اور مصلحت کا راستہ اختیار کریں۔الیکشن سے قبل ایسے حالات ہونے چاہئیں جن میں سیاسی کارکن اپنی سرگرمیاں بنا کسی خوف و ڈر کے انجام دے سکے اور ووٹر بھی بے جھجک اپنی حق رائے دہی کا استعمال کرنے کیلئے گھر سے نکلے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest