مودی حکومت نے پچھلے پانچ سال کے دوران آئین پر حملہ کیا،پارلیمنٹ کو کمزور کیا:سونیا گاندھی

نئی دہلی:سونیا گاندھی نے کانگریس پارلیمانی پارٹی کی میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اس حکومت نے اپوزیشن کا گلا دبانے کا کام کیا ہے۔اس نے سیاسی مخالفین کو کچلا ہے اور ملک کے عوام کے بولنے کی آزادی کو چھینا ہے۔پارلیمانی روایت کو توڑا گیا ہے اور اسے کمزور کیاگیا ہے۔پارلیمنٹ میں بحث نہیں ہورہی ہے اور ملک کے سب سے بڑے ایوان سے لوگوں کو گمراہ کیا جارہا ہے۔
انہوں نے لوک سبھا میں کانگریس کےلیڈر ملکارجن کھڑگے اور راجیہ سبھا میں اپوزیشن کےلیڈر غلام نبی آزاد اور ڈپٹی لیڈر آنند شرما کو مبارکباد دی اور کہا کہ انہوں نے جمہوری طریقے سے حکومت کے اپوزیشن کی آواز دبانے کی کوششوں کا مقابلہ کیاہے۔ترقی پسند اتحاد (یو پی اے)کی صدر اور کانگریس کی پارلیمانی پارٹی کی لیڈر سونیا گاندھی نے مودی حکومت پر بدھ کو جم کر حملہ کرتے ہوئے کہا کہ پچھلے پانچ سال کے دوران اس نے آئین پر حملہ کیا ہے،پارلیمنٹ کو کمزور کیا ہے،مخالفین کی آواز دبائی ہے اور تنظیموں کو کمزور کرنے کا کام کیا ہے۔اب صرف اپوزیشن پارٹیاں کانگریس کی صلاح لیتی ہیں اور انہیں صلاح دیتی بھی ہیں۔انہوں نے کہا ،’’اس نئے جوش کے ساتھ ہمیں اب لوک سبھا الیکشن کے لئے آگے بڑھنا ہے۔چھتیس گڑھ ،مدھیہ پردیش اور راجستھان میں اسمبلی انتخابات میں کانگریس کی جیت نے ہمارے لیڈروں اور کارکنان میں جوش بھردیا ہے۔ملک کے عوام بھی حکومت کی جملے بازی کو سمجھنے لگے ہیں۔اس لئے اب مودی حکومت کا جم کر مقابلہ کرنا ہے۔‘‘

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest