مدھیہ پردیش انتخابی نتائج کے بعد مایا وتی نے کانگریس کی حمایت کا اعلان کیا

بی ایس پی سپریمو نے کہا، کئی ایشو زپر ہمارے اور کانگریس کے نظریات ایک نہیں ہیں ، لیکن ہم انہیں حمایت دیں گے، اگر راجستھان میں ضرورت پڑی تو وہاں بھی حمایت دیں گے

بی ایس پی سپریمو محترمہ مایاوتی نے مدھیہ پردیش کے انتخابی نتائج کے بعد پریس کانفرنس کرکے کہا کہ عوام نے بی جے پی دھتکار دیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہم دونوں ریاستوں میں کانگریس کو حمایت دیتے کے لیے تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اسمبلی انتخابات میں عوام نے کانگریس کو دل سے منتخب کیا ہے جس کے لئے بی ایس پی عوام کے ووٹوں کا احترام کرتی ہے اور سماج کے محروم و پسماندہ طبقات کے مفاد میں مدھیہ پردیش میں کانگریس کی حمایت کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ راجستھان میں بھی ان کی پارٹی کانگریس کی حمایت کرنے کے لئے تیار ہے۔ بہوجن سماج پارٹی ( بی ایس پی ) کی سربراہ مایا وتی نے پانچ ریاستوں کے انتخابی نتائج آنے کے بعد پریس کانفرنس کی ۔ اس دوران انہوں نے کہا کہ بی ایس پی نے کانگریس اور بی جے پی دونوں سے مقابلہ کیا ہے ۔ مایا وتی نے کہا کہ بی ایس پی مدھیہ پردیش میں کانگریس کی حمایت کررہی ہے ۔ پریس کانفرنس کے دوران انہوں نے کہا کہ لوگ بی جے پی کی پالیسی سے ناراض تھے ، اس وجہ سے نہیں چاہتے ہوئے بھی لوگوں نے کانگریس کا انتخاب کیا ۔بی ایس پی سربراہ نے کہا کہ نتائج دکھاتے ہیں کہ راجستھان ، چھتیس گڑھ اور مدھیہ پردیش ریاستوں میں لوگ پوری طرح سے بی جے پی کے خلاف تھے ۔ بڑے متبادل موجود نہیں ہونے کی حالت میں عوام نے کانگریس کو منتخب کیا ۔مایا وتی نے کہا کہ کئی ایشو زپر ہمارے اور کانگریس کے نظریات ایک نہیں ہیں ، لیکن ہم انہیں حمایت دیں گے۔ اگر راجستھان میں ضرورت پڑی تو بی ایس پی وہاں بھی کانگریس کو حمایت دے گی ۔ ساتھ ہی مایا وتی نے کہا کہ بی جے پی اور کانگریس نے ایس سی ایس ٹی کیلے کچھ نہیں کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس غیر ہے ، لیکن بیر نہیں ہے ۔ کانگریس راج میں دلتوں کا بھلا نہیں ہوا ، اس لئے ہم نے بی ایس پی بنائی ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest

RSS
Follow by Email
Facebook
Twitter
Pinterest
LinkedIn
Instagram