مسجد فتحپوری کی دوکانوں کی نئی کرایہ داری کرے گادہلی وقف بورڈ

کل 119کمرشیل یونٹ کی کرایہ داری رد کرکیجنرل بڈ کے تحت ہوگی نئی کرایہ داری،31اگست تک موجودہ کرایہ داروں کے پاس ہے آخری موقع

نئی دہلی:دہلی وقف بورڈ جامع مسجد فتحپوری کے آس پاس واقع کل 119کمرشیل یونٹ کی نئی کرایہ داری کرنے جارہاہے جس کے لئے اس نے ان دوکانوں پر موجود دوکانداروں کوگزشتہ دو دن میں وقف بورڈ کی تازہ ہدایت کا نوٹس حوالے کردیا ہے اور جن لوگوں نے لینے سے انکار کیا ان کی دوکانوں پر یہ نوٹس چسپاں کردیا گیا۔تازہ ہدایت میں کہا گیا ہے کہ دلی وقف بورڈ لیز رول 2014کے عمل میں آنے کے بعد سے ہی سرکل ریٹ کے حساب سے نئی کرایہ داری کی کوشش کی جارہی ہے اور اس کو دیکھتے ہوئے مذکورہ جائداد سے متعلق انفرادی طور پر بھی اور اسوسییشن کے ساتھ بھی 5سے زائد میٹنگ کی جاچکی ہیںجن کا ابھی تک کوئی نتیجہ بر آمد نہیں ہوسکا۔بورڈ نے آگے لکھا ہے کہ ایسا محسوس ہوتا ہے کہ مذکورہ جائدادوں پر موجود قابضین کے ارادے ٹھیک نہیں ہیں اور وہ ان جائداد پر غیر قانونی قبضہ کرنا چاہتے ہیں۔بورڈ نے اپنی ہدایت میں واضح لکھا ہے کہ نوٹس کی وصولیابی کے 15دن کے اندر اندر جامع مسجد فتح پوری کی جائداد پر موجود دلی وقف بورڈ کے کرایہ دار وقف لیز رول 2014کے حساب سے نئی کرایہ داری کرالیں ورنہ انھیں غیر قانونی قابضین تصور کرتے ہوئے وقف ایکٹ دفعہ 54کے تحت کرایہ داری سے خارج کردیا جائے گا۔ دراصل دہلی وقف بورڈ نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ جامع مسجد فتحپوری میں موجود کل 119وقف جائدادکا کرایہ سرکل ریٹ کے حساب سے وصولے جس کے لئے بورڈ نے لگاتار 2013سے ان جائداد پر موجود دوکانداروں کو ہدایت جاری کی تاہم بورڈ کی ہدایت پر کچھ ہی لوگوں نے عمل کیا اور باقی نے لاپرواہی سے کام لیتے ہوئے بورڈ کی ہدایت پر توجہ نہیں دی جس کے بعد وقف بورڈ نے اب ان تمام جائداد اور دوکانوں کو خالی کرانے کا فیصلہ کیا ہے اور جلد ہی سب کو وقف ایکٹ کی دفعہ 54کے تحت دوکانیں اور گھر خالی کرنے کے نوٹس دیدئے جائیں گے جس کے بعد وقف بورڈ اخبارات میں اشتہار دیکر ان جائداد پر نئی کرایہ داری کے لئے جنرل بڈکے ذریعہ بولی لگوائے گا اور زیادہ بولی لگانے والوں کو کرایہ داری کی رسید دیدی جائے گی۔وقف بورڈ کا کہنا ہے کہ وہ اس جنرل بڈ میں پرانے کرایہ داروں کو بھی موقع دے گا اور اگر وہ وقف بورڈ کی شرائط اور لیز رول کے مطابق کرایہ داری کے اہل پائے جاتے ہیں تو انھیں ہی کرایہ دار بنایا جائے گا ورنہ زیادہ بولی لگانے والے کسی دیگر فرد کو کرایہ داری دیدی جائے گی۔غور طلب ہے کہ دہلی وقف بورڈ اپنی آمدنی میں لگاتار اضافہ کے لئے نہایت سرگرمی کے ساتھ کام کر رہاہے۔وقف بورڈ کی ذمہ داری جب سے امانت اللہ خان کے کاندھوں پر آئی ہے تب سے ہی بورڈ کی آمدنی میں اضافہ ہورہاہے اور اب بورڈ دہلی میں 250وقف اسکول بھی کھولنے کی تیاری میں ہے جس کے لئے بورڈ کے اخراجات بھی بڑھنا یقینی ہے ایسی صورت میں بورڈ اپنی آمدنی بڑھانے کی ہر ممکن کوشش میں مصروف ہے ۔غور طلب ہے کہ فتحپوری سے متعلق کل 119جائداد پر وقف بورڈ عملہ نے نوٹس چسپاں کر دئے ہیںجن میں ایم سی ڈی کے ذریعہ چلائے جارہے دو اسکول بھی شامل ہیں جن میں تعلیم نہیں ہورہی تھی۔وقف بورڈ کے عملہ نے ان پر دہلی وقف بورڈ اسکول کے سائن بورڈ لگاکر انھیں اپنے قبضہ میں لے لیا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest

RSS
Follow by Email
Facebook
Twitter
Pinterest
LinkedIn
Instagram