ممتا سےناراض کلکتہ کے 69ڈاکٹروں نے استعفیٰ سونپا

کلکتہ:مریض کی موت کے بعد جونیئر ڈاکٹروں کے ساتھ مارپیٹ کے خلاف جونیئر ڈاکٹروں کا چوتھے دن بھی جاری ہے،اس کی وجہ سے اسپتالوں میں صورت حال خراب ہوتی جارہی ہے،کئی مریضوں کی حالت نازک بن گئی ہے وہیں اس معاملے میں کلکتہ ہائی کورٹ نے بنگا ل حکومت سے رپورٹ طلب کی ہے دوسری جانب آر جی کار میڈیکل کالج و اسپتال کے 69ڈاکٹروں نے ممتا بنرجی سے غیر مشروط معافی کا مطالبہ کرتے ہوئے اپنا استعفیٰ سونپ دیا ہے۔ ہڑتال پر بیٹھے ڈاکٹروں کے خلاف سخت کارروائی کی دھمکی دیے جانے کی وجہ سے ممتا بنرجی سے ڈاکٹرناراض ہیں۔بتایاجارہا ہے کہ جونیئر ڈاکٹروں کے ہڑتال کو ملک گیر سطح پر حمایت مل رہی ہے،ایمس اور دیگر ریاستوں کے ڈاکٹر نے علامتی ہڑتال کرنے کا اعلان کیا ہے۔ممتا بنرجی نے کل دوپہر ایک بجے ایس ایس کے ایم اسپتال کا دورہ کیا تھا۔وزیرا علیٰ ممتا بنرجی نے مریضوں کی صورت حال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہڑتال پر بیٹھے جونیئر ڈاکٹروں سے کہا کہ وہ چار گھنٹے کے اندر ہڑتال کو ختم کردیں ورنہ ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔وزیرا علیٰ کی وارننگک کےبعد ڈاکٹروں کی ناراضگی میں مزید اضافہ ہوگیا ہے اور ہڑتال ختم کرنے سے ڈاکٹروں نے انکار کردیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest