ڈیری مصنوعات کی اہمیت

دودھ اور اس سے بنی اشیا پروٹین اور کیلشیم کا انتہائی اہم ذریعہ ہیں۔ بالخصوص بڑی عمر کے افراد کے لئے رات کو سونے سے قبل گرم دودھ کا ایک گلاس اور اٹھنے کے بعد مکھن اور پنیر کا استعمال اہم مانا جاتا ہے، تاہم مکھن اور پنیر کا استعمال حسب ضرورت ہونا چاہئے کیوں کہ پنیر کھانے سے نمکیات کی مقدار بڑھ سکتی ہے۔ دودھ میںکیلشیم کی مقدار سب سےزیادہ پائی جاتی ہے، جو ہڈیوں کی نشوونما کرتی ہے۔ دودھ معدہ کے زخم، تیزابیت اور دماغی صحت کے لئے مفید ہے، جسے ہمیشہ خالی پیٹ صبح ناشتے کے وقت یا عصر کے وقت پینا چاہیے۔ دائمی نزلے کے مریضوں کو گائے کا نیم گرم دودھ شہد ملا کر پینے سے فائدہ ہوتا ہے۔ دودھ پینے والے لمبی عمر پاتےہیں۔
گائے کا دودھ
گائے کا دودھ چہرے کا رنگ نکھارتا، دماغ کو طاقت دیتا، نسیان،بھلکڑپن، مالیخولیا میں مفید، خفقان اور وہم کو دور، دل کو مضبوط اور خون کو گاڑھا کرتا ہے۔ قد بڑھانے کے عمل میں معاون پروٹین لائی سن (Lysin) کی دودھ میں 7.61فیصد مقدارہوتی ہے۔ دماغی کام کرنے والوں کے لئے آدھا کلو گائے کا دودھ مفید ہے۔ بینائی کو تیز کرتا ہے۔ اس میں وٹامن اے اور ڈی زیادہ ہوتا ہے، جو جسم میں پھرتی و چستی لاتا ہے۔ بال ، ناخن ، دانت اور آنکھ کی صحت کے لئے ایک گلاس روزانہ گائے کا دودھ استعمال کیا جائے۔
بھینس کا دودھ
نیم گرم بھینس کا دودھ وٹامن ڈی کا خزانہ ہے۔ اسے پینے سے جسم توانا ہوتا ہے۔ چینی ملا کر پینا اعضا کو مضبوط کرتا ہے۔ بلغم کے مسئلے کے شکار افراد الائچی، سونٹھ یا چھوارے ڈال کر استعمال کریں۔
بکری کا دودھ
چہرے کے نکھار، کھانسی کی روک تھام، غم، وحشت اور خفقان کی صورت بکری کا گرم گرم تازہ دودھ بہت اکسیر ہے، بالخصوص گرم مزاج لوگوں کے لئے۔ اس میں شامل معدنی نمک سوڈیم جسم کے زہریلے مواد کو پگھلا کر گردے اور مثانے کے راستے خارج کرتا ہے۔ملائم جلد اور خوبصورتی کے لئے یہ خواتین کے لئے خاص قدرتی تحفہ ہے، جو چہرے کی جھائیوں اور مہاسوں کو بھی ختم کرتا ہے۔ اس میں فولاد کی اچھی مقدار ہوتی ہے جو سینے کی جلن ختم کرتا، پیٹ کی بیماریاں بھگاتا اور دمے کے مریضوں کے لئےشفا بخش ہوتا ہے۔ اس کا مکھن اور گھی تپ دق کے مریضوں کے لئے انتہائی مفید ہے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest

RSS
Follow by Email
Facebook
Twitter
Pinterest
LinkedIn
Instagram