کشمیر میں مزدوروں پر دہشت گردانہ حملہ۔

کولگام سے موصولہ اطلاعات کے مطابق ، منگل کی شام کو ، خودکار ہتھیاروں سے لیس پانچ سے چھ دہشت گرد گاؤں میں داخل ہوئے۔انھوں  نے گاؤں کے مضافات میں مقیم غیر کشمیری کارکنوں کے کیمپ کا دروازہ کھٹکھٹایا اور انھیں وہاں موجود سات افراد کو ان کے ساتھ چلنے کو کہا۔ دہشت گردوں  انہیں وہاں سے کچھ دور لے گئےاور پھر انہوں نے ان پر اندھا دھند فائرنگ کردی۔ گولیاں چلتے ہی تمام کارکن زمین پر گر پڑے۔ دہشت گردوں نے یہ سوچ کر انہیں چھوڑ دیا تھا کہ وہ مر چکے ہیں۔ دہشت گردوں کے جانے کے بعد آس پاس کے  لوگوں نے پولیس کو اطلاع دی۔ لہو سے لپٹے تمام کارکنوں کو قریب ترین اسپتال منتقل کیا گیا۔ جہاں ڈاکٹروں نے پانچ کارکنوں کو مردہ قرار دے دیا۔ ایک مزدور ظہیرالدین کی نازک حالت کے پیش نظر ، اسے علاج کے لئے سری نگر کے اسپتال لایا گیا ہے۔اس واقعے کے بعد جموں اور ادھم پور میں کشمیر جانے والے تمام ٹرکوں کو روک دیا گیا ہے۔ شاہراہ پر ٹرکوں کی لمبی قطار ہے۔ یہ مزدور مغربی بنگال کے مرشدآباد کے تھے اور جموں۔وکشمیر میں مزدوری کرکے اپنے کنبے کی پرورش کرتے تھے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *