کشمیر معاملے پر پاکستان کو چیخنے چلانے کو کوئی حق نہیں:معراج عالم

سماجی کارکن معراج عالم کا پاکستان کے خلاف زبردست غم و غصہ

نئ دہلی:(نامہ نگار)آج سماجی کارکن معراج عالم نے کشمیر مسئلے پر پاکسان کی در اندازی اور رویے پر برہمی کا اظہار کرتےہوئے کہا کہ پاکستان کشمیر کے مسئلے پر عیاری کے آنسو نہ بہائے۔معراج عالم نے کہا کہ پاکستان جو کشمیر کے ایک تہائی حصے پر قابض ہے اور یہ کشمیر میں دہشت گردی کو فروغ دے رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ کشمیر میں دہشت گردوں کو فنڈ دینے کا کام کر رہا ہے۔پاکستان کی دہشت گردی کی تازہ ترین مثال پلوامہ حملہ تھا،جس میں چالیس ہمارے سی آر پی ایف کے جوان مارے گئے تھے۔پاکستانی وزیر اعظم عمران خان کا ٹرمپ سے ثالثی کی درخواست کرنا لیکن ان کی جانب سے کشمیر مسئلے پر ابھی تک کوئی مثبت پیش رفت نہیں ہوئ ہے۔پاکستان نے بطور تحفہ کشمیر کا ایک بڑا حصہ چین کو سونپ دیا۔پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے ہندوستان کے کشمیر پر بنائے گئے قانون پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ یکطرفہ کوئی بھی قدم کشمیر کے معاملے کا حل نہیں ہے۔واضح رہے کہ کشمیر تنازعہ کا معاملہ اقوام متحدہ کے سلامتی کونسل میں درج ہے۔یو این ایس سی کی قرار دادیں کشمیری اور پاکستانی عوام کیلئےاب کبھی بھی قابل قبول ہونگی۔معراج عالم نے کہا کہ حقیقت یہ ہیکہ پاکستان کے پاس کشمیر معاملے پر بولنے کیلئے کوئی واضح موقف نہیں ہے۔پاکستان نے 1947اور 1948 میں کشمیر کے ایک تہائی حصے پر قبضہ کر لیا تھا۔اس حقیقت کے باوجود کہ ریاست کا اختیار مہاراجہ ہری سنگھ کے پاس تھا۔پاکستان نے اپنے آلہء کار کے ذریعہ جموں کشمیر کی پوری ریاست تک رسائی حاصل کی۔ کشمیر کے آخری بادشاہ مہاراجہ ہری سنگھ کے ساتھ کشمیر اور ہندوستان کے الحاق پر 26 اکتوبر1947کو دستخط ہوئے۔جس میں پاکستان کے قبضہ والے گلگت اور بلتستان بھی شامل تھے۔2009 میں اپنے دو حکم نامے کے ذریعے علاقے کی حیثیت کو تبدیل کر دیا۔2018 میں پورے علاقے کو متحد کرتے ہوئے،جو کبھی شمالی کے نام سے جانا جاتا تھا پاکستان کے انتطامی سیٹ اپ میں اسے دور کر دیا تھا۔پی او کے جسے پڑوسی ملک شوق سے آزاد جموں و کشمیر کہتا ہے۔کشمیر میں اشتعال انگیزی اور دہشت گردی کے حملوں نے ہمارا صبر کا امتحان لیا۔لیکن ہم اپنے عزم میں ڈٹے رہے۔پاکستان جو فائر پاور کے ذریعہ لوگوں کو مار ڈالنے اور معانقہ کرنے کیلئے استعمال کرتا تھا۔کنٹرول لائن پر کشمیر کے بوڑھے ،بچے اور خواتین کو پاکستان نشانہ بنا رہا ہے۔معراج عالم نے کہا کہ مودی حکومت انہیں حالات کو تبدیل کرنا چاہتی ہے۔بی جی پی کی حلیف پارٹی پی ڈی پی کی جانب سے کبھی بھی کشمیر کی خصوصی حیثیت کو تبدیل کرنے کیلئے کوئی اقدام نہیں کیا۔بعد میں مودی حکومت کو جب پورا اختیار حاصل ہو اتو کشمیر کی بہتری کیا اس جانب عملی اقدام کئے۔معراج عالم نے مزید کہا کہ پاکستان کی جانب سے کشمیر میں مسلسل تشدد اور خون خرابے کا ننگا ناچ ناچا جا رہا ہے۔پاکستان طویل عرصہ سے دہشت گردانہ حرکت کرکے ہندوستان کے صبر کا امتحان لے رہا ہےاور پاکستان کی جانب سے ہنوز یہ سلسلہ جاری ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest

RSS
Follow by Email
Facebook
Twitter
Pinterest
LinkedIn
Instagram