کشمیر کے شوپیان میںفوج اور جنگجوئوں کے مابین تصادم، دو جنگجو ہلاک

سری نگر:کشمیر کے ضلع شوپیان کے ہف شرمال علاقہ میں منگل کو ہونے والے ایک مسلح تصادم میں دو جنگجو مارے گئے۔ مہلوک جنگجوؤں میں مبینہ طور پر ڈاکٹری کی پڑھائی چھوڑ کر جنگجو بننے والا نوجوان بھی شامل ہے۔ یہ نوجوان ایک آئی پی ایس افسر کا بھائی ہے۔فوج کی چنار کور نے اپنے آفیشل ٹویٹر ہینڈل پر ایک ٹویٹ میں کہا ‘آپریشن شرمال آپریشن۔ دو جنگجوؤں کو ہلاک کیا گیا۔ آپریشن جاری ہے۔اطلاعات کے مطابق مسلح تصادم کے مقام پر مقامی لوگوں اور سیکورٹی فورسز کے درمیان شدید جھڑپیں بھڑک اٹھی ہیں۔ جھڑپوں کے دوران متعدد مقامی لوگوں کے علاوہ چار فوٹو جرنلسٹس کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔ مسلح تصادم کے دوران فوج کا ایک اہلکار زخمی ہوا ہے۔سرکاری ذرائع نے بتایا کہ شوپیان کے ہف شرمال میں جنگجوؤں کی موجودگی سے متعلق خفیہ اطلاع ملنے پر سیکورٹی فورسز اور ریاستی پولیس کے ایس او جی نے مذکورہ علاقہ میں کارڈن اینڈ سرچ آپریشن شروع کیا۔ انہوں نے بتایا کہ تلاشی آپریشن کے دوران ایک میوہ باغ میں اپنے خفیہ ٹھکانے پر چھپے بیٹھے جنگجوؤں نے سیکورٹی فورسز پر فائرنگ کی۔سرکاری ذرائع نے بتایا کہ سیکورٹی فورسز نے جوابی فائرنگ کی جس میں دو جنگجومارے گئے۔ انہوں نے بتایا کہ مہلوک جنگجوؤں کی لاشیں برآمد کرکے خفیہ ٹھکانے سے بھاری مقدار میں اسلحہ و گولہ بارود برآمد کیا گیا ہے۔دریں اثنا انتظامیہ نے ضلع شوپیان میں موبائیل انٹرنیٹ خدمات منقطع کردی ہیں۔ مزید احتجاجی مظاہروں کے خدشے کے پیش نظر ضلع کے حساس علاقوں میں سیکورٹی فورسز کی اضافی نفری تعینات کی گئی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *