کشمیر میں معصوم بچےحراست میں

موصولہ اطلاعات کے مطابق وادی بھر میں ہفتہ کو مسلسل 48 ویں دن بھی دکانیں اور تجارتی مراکز بند رہے جبکہ سڑکوں پر پبلک ٹرانسپورٹ کی آمدورفت معطل رہی جن میں خاص کر بچوں کو انڈیا کے زیرِ انتظام کشمیر میں غیر قانونی طور پر حراست میں رکھا جا رہا ہے۔ حراست میں لیے گئے افراد میں سیاسی رہنما، کاروباری افراد اور کارکن شامل ہیں۔انڈین فوج نے کو بتایا ہے کہ مسلح افواج کے متنازع خصوصی اختیارات کے ایک ایکٹ کے تحت مجرموں کو تحویل میں لینے کے لیے جموں و کمشیر پولیس کے ساتھ ان کی مشترکہ کاروائیاں جاری ہیں ۔ ایس آر ٹی سی کی کوئی بھی گاڑی عام شہریوں کے لئے دستیاب نہیں ہے جس کی وجہ سے انہیں شدید مشکلات کا سامنا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest

RSS
Follow by Email
Facebook
Twitter
Pinterest
LinkedIn
Instagram