کرتارپور کوریڈور پر پاکستان سے سے مذاکرات شروع

پاکستان میں واقع گرودوارہ دربار صاحب کو ہندوستان سے جوڑیں گے کوریڈور

کرتار پور کو لے کر ہندوستان اور پاکستان کے بیچ اہم میٹنگ شروع ہوگئی ہے۔ یہ میٹنگ اٹاری۔واگھا پر ہندوستان کی طرف سے ہورہی ہے۔ ہندوستان کی جانب سے مرکزی وزارت داخلہ، وزارت خارجہ، بی ایس ایف، انڈین نیشنل ہائی وے ڈیولپمنٹ اتھارٹی اور پنجاب حکومت کے افسر شامل ہیں۔ اس منصوبے پر دونوں ممالک کی طرف سے رضامندی ظاہر کرنے کے تین ماہ بعد یہ اجلاس ہو رہی ہے۔آپ کو بتادیں کہ دونوں ہمسایہ ممالک کے مابین اس راہداری کے کھولے جانے کے حوالے سے ملاقات پہلے قومی راجدھانی دہلی میں ہونا تھی۔ اب اس ملاقات کا وقت اور تاریخ تو تبدیل نہیں کیے گئے مگر جگہ تبدیل کر دی گئی ہے۔آپ کو بتادیں کہ ہندوستان اور دنیا بھر سے ہر سال ہزارہا سکھ یاتری ہر سال پاکستان آ کر اپنے مقدس مذہبی مقامات کا رخ کرتے ہیں۔ پاکستان سکھ یاتریوں کا پاکستان آنا ممکن ہے یہ جان کر گرونانک کے یاتری بے حدخوش ہیں۔ ہر سال لاکھوں سکھ یاتری پاکستان کا رخ کرتے ہیں۔ ان کی آمد پاکستانی معیشت کے لیے بھی فائدہ مند ہے، جس میں کرتارپور کوریڈور کھلنے کے بعد مزید اضافہ ہو سکے گا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest