کملیش تیواری کے قاتلوں نے بقول پولیس گناہ قبول کرلیا۔جانئے کیوں کیا قتل

کملیش تیواری کے جو تین قاتل پکڑے گئے تھےا شفاق اور معین الدین پولیس کا کہنا ہے کہ انھوں نے اپنا گناہ قبول کرلیا ہے اور وجہ وہی متنازعہ بیان ہے جسمیں پیغمبر محمد صلی اللہ علیہ وسلم کی شان اقدس میں گستاخی سے لبریز کلمات ادا کئے گئے تھے پولیس اور اے ٹی ایس نے دعویٰ کیا ہے کہ شیخ اشفاق حسین اور پٹھان معین الدین احمد سے ہوئی پوچھ گچھ میں ان دونوں اہم ملزمان نے اپنے جرم کا اعتراف کر لیا ہے۔
پولیس کے مطابق، گرفتار قاتلوں میں اشفاق نے کملیش پر چاقو سے کئی حملے کیے اور پھر بے رحمی سے اس کا گلا کاٹ دیا تھا۔ گلا رکاٹنے کے دوران اس کا بھی ہاتھ غلطی سے زخمی ہوگیا تھا جو شاید قتل کا ایک اہم ثبوت بنا ۔ دوسرے اہم ملزم معین الدین کے بارے میں بتایا کہ اس نے کملیش کو گولی ماری تھی۔ پولیس کا کہنا ہے کہ گجرات کے سورت سے گرفتار تین سازش رچنے والوں راشد پٹھان، مولانا محسن اور فیضان نے ہی دونوں کا برین واش کر کے انہیں قتل کے لیے تیار کیا گیا تھا۔ اے ٹی ایس کے ڈی آئی جی نے بتایا کہ دونوں ہی اہم ملزمین تینوں سازش رچنے والوں سے گزشتہ ڈیڑھ سال سے رابطے میں تھے، لیکن انھوں نے کبھی فون پر بات نہیں کی۔یا تو پولیس نے اپنیئ تفتیش اس متنازہ بیان پر ہی مرکوز رکھی اور یا پھر یہی سچ ہے اب یہ ثابت کرنا بھی آسان نہیں ہوگا

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest

RSS
Follow by Email
Facebook
Twitter
Pinterest
LinkedIn
Instagram