ہندوستان کے لئے کیوں کھیلتے ہو ؟جانئے عرفان پٹھان نے اس سوال کا کیسا منہ توڑ جواب دیا

ا
عرفان پٹھان نے جب جامعہ ملیہ کے طالب علموں پر جو پولیس کی بربرتا ہوئی اس پر ٹویٹ کیا تو ان کو خوب ٹرول کیا گیا جامعہ تشدد پر احتجاج میں سبھی شامل ہیں جب عرفان پٹھان نے اس پر اپنی ناراضگی جتائی تو لوگوں نے ان پر کافی انگلیں اٹھائیں اس وقت عرفان نے ایک کہانی شئر کی کہ جب سال 2004 میں دوستانہ سیریزکے لئے پاکستان گئے تھے۔ اس دوران وہ راہل دراوڑ، پارتھیو پٹیل اورلکشمی پتی بالا جی کے ساتھ لاہورکے ایک کالج میں گئے، جہاں تقریباً 1500 بچے موجود تھے اوران سے سوال کررہے تھے۔ ان کے درمیان ایک لڑکی کھڑی ہوئی اوربے حد غصے میں عرفان پٹھان سے پوچھا کہ اگروہ مسلمان ہیں تو ہندوستان کی طرف سے کیوں کھیلتے ہیں؟ عرفان پٹھان نے بتایا، میں کھڑا ہوا اورکہا کہ میں ہندوستان سے کھیل کراس پرکوئی احسان نہیں کررہا ہوں۔ ہندوستان میرا ملک ہے، میرے آباء واجداد ہندوستان کے ہیں، میں خوش قسمت ہوں کہ اس کی نمائندگی کرپا رہا ہوں۔ میرا جواب سن کرکالج میں سب نے تالیاں بجائیںعرفان پٹھان نےکہا کہ جب وہ گیند بازی کرتے ہیں وہ یہ نہیں سوچتے کہ وہ ایک مسلمان ہیں، کیونکہ وہ خود کوسب سےپہلے ہندوستانی مانتے ہیں۔ عرفان پٹھان نے کہا کہ اگروہ پاکستان جا کران کے سامنے اپنے ملک کے لئے یہ کہہ سکتے ہیں تواپنے ہی ملک میں اپنی بات کیوں نہیں رکھ سکتے ہیں۔حالانکہ اس ٹویٹ کے بعد عرفان پٹھان پر پیسے لیکر ٹویٹ کرنے کا بھی الزام لگایاگیا جس پر عرفان نے کہا کہ انھوں نے تو عمران خان کے خلاف بھی ٹویٹ کیا تھا تب ان پر ایسا الزام کیوں نہیں لگایا گیا

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest

RSS
Follow by Email
Facebook
Twitter
Pinterest
LinkedIn
Instagram