آئی پی ایل کے باقی میچ ہوئے دلچپ

کولکتہ کی 13 میچوں میں یہ چھٹی کامیابی ہے اور اس کے 12 پوائنٹس ہو گئے ہیں جبکہ پنجاب کی 13 میچوں میں یہ آٹھویں شکست ہے اور اسکے 10 پوائنٹس ہیں۔کولکاتہ کو پلے آف کے لئے اپنا آخری میچ جیتنا ہے اور دوسری ٹیموں کے نتائج پر بھی نظر رکھنی ہے۔ حیدرآباد کے 13 میچوں سے 12 پوائنٹس، راجستھان کے 13 میچوں سے 11 پوائنٹس اور پنجاب کے 13 میچوں سے 10 پوائنٹس ہیں۔ پنجاب کو اپنا آخری میچ اتوار کو چنئی سے کھیلنا ہے جبکہ کولکتہ کو اسی دن ممبئی سے مقابلہ کرنا ہے۔ پنجاب اگراپنا آخری میچ جیتے اور پلے آف کی دوڑ کی چوتھی ٹیم کی دوڑ کے لئے باقی ٹیمیں اپنے میچ ہار جائیں تو پنجاب کے لئے کچھ امیدیں بن سکتی ہیں۔
پنجاب کی اننگز میں کیرن نے آخری اوور میں ہیری گرني کی گیندوں پر 2،2،4،6،4،4 اڑاتے ہوئے 22 رن بنائے اور آئی پی ایل میں اپنی پہلی نصف سنچری مکمل کی۔ انہوں نے 24 گیندوں پر ناٹ آوٹ 55 رن میں سات چوکے اور دو چھکے لگائے۔ وہیں نکولس پورن نے 27 گیندوں پر 48 رن میں تین چوکے اور چار چھکے لگائے جبکہ مینک اگروال نے 26 گیندوں پر 36 رن میں دو چوکے اور ایک چھکا لگایا۔ مندیپ سنگھ نے 17 گیندوں پر 25 رن میں ایک چوکا اور ایک چھکا لگایا۔سلامی بلے باز کرس گیل نے 14 گیندوں پر 14 رن میں دو چوکے لگائے ۔ لوکیش راہل دو رن بنا کر آؤٹ ہوئے جبکہ کپتان روی چندرن اشون کا کھاتہ بھی نہیں کھلا۔ پنجاب کا چھٹا وکٹ 19 ویں اوور کی پہلی گیند پر 151 کے اسکور پر گرا تھا لیکن اس کے بعد اگلی 11 گیندوں پر کیرن نے 32 رن بنائے۔کولکتہ کی جانب سے سندیپ واریر نے 31 رن پر دو وکٹ لئے جبکہ گرني کو 41 رن پر ایک وکٹ، آندرے رسل کو 29 رن پر ایک وکٹ اور نتیش رانا کو آٹھ رن پر ایک وکٹ ملا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest