ٹرمپ نے اپنے اوپر لگے الزام کو مسترد کیا

 

واشنگٹن: امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے پیر کو کہا کہ وہ اس شخص سے ملنا چاہتے ہیں جس نے ان پر فون سے بات چیت کے دوران یوکرین کے صدر ولاديمير زیلنسكي پر دباؤ بنانے کا الزام لگایا ہے۔
مسٹر ٹرمپ نے ٹوئٹر پر کہا’’ہر امریکی کی طرح، میں بھی ،مجھ پر الزام لگانے والے شخص سے ملنے کا حق رکھتا ہوں، خاص طور پر جب وہ شخص ایک نام نہاد ’وہسل بلوور‘ ہو اور اس نے ایک غیر ملکی رہنما کے ساتھ ہونے والی بات چیت کے لئے مکمل طور پر غلط اور دھوکہ دینے کے طریقے سے دکھایا ہو‘‘۔امریکی حکومت کے ایک ’وہسل بلوور ‘نے دعویٰ کیا تھا کہ صدر نے جولائی میں فون پر بات چیت کے دوران مسٹر والدیمیر زیلنسکی پر 2020 کے صدر کے عہدے کی دوڑ میں اپنا اہم ڈیموکریٹک حریف جو بائیڈن کی شبیہ مسخ کر سکنے والے معاملے پر توجہ دینے کا دباؤ بنایا تھا۔وہسل بلوور کے اس دعویٰ کے بعد ٹرمپ کی حکومت مصیبت میں پھنس گئی ہے۔امریکہ کی ڈیموکریٹک پارٹی نے یہ کہتے ہوئے مسٹر ٹرمپ کے خلاف مواخذے کی کارروائی شروع کی ہے کہ انہوں نے اپنے انتخابی مہم میں مدد کے لئے ایک غیر ملکی حکومت پر دباؤ بنایا۔ مسٹر ٹرمپ نے اپنے اوپر لگے اس الزام کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ڈیموکریٹک پارٹی نے ان کے خلاف ایک اور مہم شروع کر دی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *