پارلیمنٹ کے سرمائی اجلاس: دونوں ایوانوں کی کارروائی ملتوی

نئی دہلی: پارلیمنٹ کے سرمائی اجلاس کے پہلے دن لوک سبھا اور راجیہ سبھا میں آنجہانی سابق وزیراعظم اٹل بہاری واجپئی کو خراج عقیدت پیش کیا گیا اور ان کے احترام میں اراکین نے دو منٹ کی خاموشی اختیار کی۔ لوک سبھا اسپیکر سمترا مہاجن نے مسٹر واجپئی کی خدمات کا ذکر کرتے ہوئے تعزیتی قرارداد بھی پیش کی جسے تمام اراکین نے جذباتی طورپر منظور کیا۔راجیہ سبھا میں چیرمین ایم ونکیا نائیڈو نے ملک کی ترقی اور پارلیمانی سیاست میں مسٹر واجپئی کی منفرد خدمات کا ذکر کرتے ہوئے تعزیتی پیغام پڑھا اور اراکین نے دو منٹ کی خاموشی اختیار کرکے سابق وزیراعظم کو جذباتی خراج عقیدت پیش کیا۔
واضح رہے کہ پارلیمنٹ کے دونوں ایو انوں میں آنجہانی سابق وزیراعظم اٹل بہاری واجپئی کو جذباتی خراج عقیدت پیش کرنے اور ملک کی ترقی اور پارلیمانی سیاست میں ان کی تاریخی خدمات کو یاد کرنے کے بعد کارروائی پورے دن کے لئے ملتوی کردی۔راجیہ سبھا میں مسٹر واجپئی کے علاوہ سابق لوک سبھاکے اسپیکر سومناتھ چٹرجی، اترپردیش کے سابق وزیراعلی نارائن دت تیواری، سینئر صحافی اور یونائیٹڈ نیوز آف انڈیا (یو این آئی) کے کلدیپ نےئر (نامزد رکن) اور گزشتہ دنوں انتقال کرجانے والے ا س وقت کے پارلیمانی امور کے وزیر اننت کمار سمیت 15 ہستیوں کو خراج عقیدت پیش کیا گیا۔مسٹر نائیڈو نے یو این آئی کے سابق ڈائرکٹر اور نوبھارت کے بانی ایڈیٹر پرفل کمار مہیشوری ، سابق رکن ستیہ پرکاش مالویہ، رام دیو بھنڈاری، ڈاکٹر رتناکر پانڈے، بی پریدا ، منی پور کے سابق وزیراعلی آر کے دورین سنگھ، سابق رکن کرما ٹوپ ڈین، تیلگو فلموں کے اداکار نندموری ہری کرشن، ، محترمہ مالتی شرما اور درشن سنگھ یادو کے لئے بھی تعزیتی پیغام پڑھا۔دوسری طرف لوک سبھا میں مسٹر واجپئی، مسٹر چٹرجی اور مسٹر کما ر کے علاوہ بہار سے بی جے پی کے رکن ڈاکٹر بھولا سنگھ اور کانگریس کے مولانا محمد اسرارلحق قاسمی اور کیرالہ کے مسٹر ایم آئی شنواس کی یاد میں اراکین میں دو منٹ کی خاموشی اختیار کی گئی۔ اس کے بعد دونوں ایوانوں کی کارروائی مسٹر واجپئی کے احترام میں کل تک کے لئے ملتوی کردی گئی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest

RSS
Follow by Email
Facebook
Twitter
Pinterest
LinkedIn
Instagram