’’ہندی اردو ڈکشنری‘‘لسانی یکجہتی کی ترجمانی کرنے والی ایک بہترین کتاب: پروفیسر ضیاء الرحمٰن صدیقی

انجمن محبان اردو علی گڑھ کے اراکین کی پروفیسر ضیاء الرحمٰن صدیقی سے ان کی کتاب’’ہندی اردو ڈکشنری‘‘ کے حوالے سے خصوصی گفتگو

علی گڑھ:انجمن محبانِ اردو علی گڑھ کے اراکین عبد الحفیظ خان اور عادل فرازؔنے اے ایم یو علی گڑھ کے شعبۂ اردو کے استاذپروفیسر ضیا ء الرحمٰن صدیقی سے ایک خصوصی ملاقات کے دوران ان کی تازہ کتاب’’ہندی اردو ڈکشنری‘‘ کے حوالے سے گفتگو کی۔ موصوف نے بتایا کہ ’’یہ ڈکشنری ان لوگوں کے لئے تیار کی گئی ہے جو ہندی جانتے ہیں اور اردو سیکھنا چاہتے ہیں۔یہ ثانوی زبان کے طلبہ کو خیال میں رکھ کر مرتب کی گئی ہے تاکہ انھیں بغیر کسی دشواری کے آسانی کے ساتھ اردو سیکھائی جاسکے۔اس کتاب میں تقریباً ساڑے سات ہزار سے لے کر آٹھ ہزار تک الفاظ شامل ہیں۔اس میں وہ الفاظ ہیں جو صحافت،شاعری،اور متن میں استعمال ہوتے ہیں۔مجھے اس کتاب کو تیار کرنے میں پانچ سال لگے۔یہ کتاب حکومت ہند کی جانب سے مرکزی وزارت برائے فروغ انسانی کے ہندوستانی زبانوں کے مرکزی ادارہ ’’سی۔آئی۔ایل‘‘ کے ضوابط کے مطابق تیار کی گئی ہے۔برسوں سے شدت کے ساتھ اس طرح کی ڈکشنری کی ضرورت محسوس کی جارہی تھی جو سادہ ،عام فہم انداز میں ہو جس کے ذریعے آسانی سے اردو کو سیکھایا جا سکے۔۱۵ اگست کے موقع پر اس کتاب کامنظر عام پر آنا لسانی یکجہتی کی ایک بہترین مثال ہے۔‘‘واضح ہو کہ اس کتاب کا اجراء کیندریہ ہندی سنستھان کے ڈائرکڑ پروفیسر نند کشور پانڈے یونیورسٹی کے پرووائس چانسلر پروفیسر اختر حسیب اور شعبۂ ہندی کے صدر پروفیسر عبدالعلیم کے ہاتھوں آرٹس فیکلٹی کے آڈیٹوریم میں عمل میں آیا۔اس موقع پر صدر شعبۂ اردو پروفیسر طارق چھتاری بھی موجود تھے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest