ہائی کورٹ کے سابق جج کیلاش گمبھیر نے ہائی کورٹ کے دو ججوں کو سپریم کورٹ بھیجے جانے کی مخالفت کی

نئی دہلی: ہائی کورٹ کے سابق جج کیلاش گمبھیر نے ہائی کورٹ کے دو جسٹس کو سپریم کورٹ بھیجے جانے کی سفارش کی مخالفت کی ہے۔ جسٹس گمبھیر نے كولیجيم کے فیصلے کی مخالفت کرتے ہوئے صدر رام ناتھ كووند کو اس سلسلے میں خط لکھا ہے جس میں گمبھیر نے جسٹس سنجیو کھنہ اور دنیش ماهیشوري کو سپریم کورٹ کا جج مقرر کرنے کی سفارش کو غلط بتاتے ہوئے کہا کہ یہ غلط ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایسا کرناتاریخی بھول ہوگی۔ گمبھیر نے صدر سے اس فیصلے پر نظر ثانی کرنے کی اپیل کی۔ جسٹس گمبھیر نے صدر کو خط میں لکھاکہ ۱۱؍جنوری ۲۰۱۹ء کو میں نے یہ خبر پڑھی کہ کرناٹک ہائی کورٹ کے جسٹس دنیش ماهیشوري اور دہلی ہائی کورٹ کے سنجیو کھنہ کو كولیجيم نے سپریم کورٹ کا جج بنائے جانے کی سفارش کی ہے، پہلی نظر میں مجھے اس خبر پر یقین نہیں ہوا، لیکن یہی سچ تھا۔ جسٹس گمبھیر نے خاص طور پر جج سنجیو کھنہ کے پروموشن پر اعتراض کرتے ہوئے کہا کہ دہلی ہائی کورٹ میں ان سے سینئر تین جج اور ہیں، ایسے میں انہیں سپریم کورٹ بھیجا جانا غلط روایت کی شروعات ہوگی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *