گروگرام حملہ:انڈین یونین مسلم لیگ کی ہنگامی میٹنگ

متاثرہ خاندان سے ملنے کے لئے ایک وفد تشکیل، قانونی چارہ جوئی کے لئے لائحہ عمل تیار

نئی دہلی:انڈین یونین مسلم لیگ دہلی پردیش نے آج گروگرام میں گھر کے اندر داخل ہو کر اقلیتی طبقہ کے افراد پر جان لیوا حملہ کے خلاف ایک ہنگامی میٹنگ کی ۔جس میں پارٹی کے پردیش صدر مولانا نثار احمد حسینی نقشبندی ،عمران اعجاز جنرل سکریٹری ،معین الدین قریشی ،معین الدین انصاری نائب صدر ،نورالشمس ،شیخ فیصل حسن ،مفتی فیروز الدین مظاہری سکریٹری ،عبدالحمید انصاری خزانچی ،آصف انصاری ،محمد زاہد نائب خزانچی ،مدثر الحق ،شہزااحمد یوتھ کنوینر ،اتیب خان ،ایم ایس ایف کنوینر،قومی سکریٹری خرم عمر انیس،محمد غازی ،محمد اظہر،ارشدخان ،شفیق احمد اورنبیل احمد وغیرہ شامل ہوئے ۔ دہلی پردیش صدر مولانا نثار احمد حسینی نقشبندی نے فوری طور پر متاثرہ خاندان سے ملنے کے لئے ایک وفد تشکیل دی اور انہوں نے قانونی چارہ جوئی کے لئے لائحہ عمل تیار کیا ۔انہوں نے کہا کہ جیسے جیسے الیکشن قریب آرہا ہے شر پسند عناصر ماحول کو خراب کرنے کی کوشش کررہے ہیں ۔تاکہ پرولائیزیشن کا ماحول سازگار ہو جائے۔انہوں نے مزید کہا کہ میں کسی پارٹی پر الزام نہیں لگارہا ہوں لیکن یہ حقیقت ہے کہ موجودہ حکومت میں شر پسندوں کو عروج حاصل ہوا اور وہ بے خوف و خطر ہو کر اقلیتوں اور دلتوں پر حملہ آور ہوتے آرہے ہیں ۔ان کا حوصلہ اس وقت بڑھ جاتا ہے جب سیاسی لوگوں کی پشت پناہی انہیں حاصل ہوتا ہے اور ابھی تک یہی ہورہا ہے جس کی وجہ سے ماحول بے انتہا خراب ہوتے جارہے ہیں۔گزشتہ ماہ میرٹھ میں بھی پولیس کی موجودگی میں شرپسندوں نے مسلمانوں کے سینکڑوں گھروں میں آگ لگائی اور انتظامیہ خاموش تماشائی بنی رہی ،یہ اس بات کا اشارہ ہے کہ اقلیتوں اور دلتوں میں خوف زدہ کیا جارہا ہے اور پرولائیزیشن کر کے بوتھ مضبوط کیا جارہا ہے ۔انہوں نے انتظامیہ سے اپیل کی ہے کہ شرپسندو ں کو فوراً گرفتار کیا جائے اور متاثرین کی بھر پور مدد کی جائے ۔اس موقع پر عمران اعجاز نے کہا کہ پارٹی ملک کی موجودہ صورت حال پر غوروخوص کررہی ہے اور عنقریب لائحہ عمل تیار کرکے الیکشن کمیشن میں میمورنڈم دے گی جس میں حکمراں جماعت کی خاموشی اور انتظامیہ کی لاپروائی کی شکایت درج کی جائے گی ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest