جی ایس ٹی کی تعداد میں اضافہ

لیکن ساتھ ہی رٹرن نہ فائل کرنے والے ٹیکس دہندگان کی تعداد میں بھی اضافہ

نئی دہلی: مودی حکومت کی طرف عوام کو بطور خاص چھوٹے موٹے تاجروں کو تحفہ میں دیے گئے جی ایس ٹی پہلے تو درد سربنی ہوئی تھی، لیکن اب جب کہ اس سے چھٹکارا کا کوئی راستہ نہیں ملا تو اب جی ایس ٹی میں رجسٹرڈ ٹیکس دہندگان کی تعداد دن بدن بڑھتی ہی جارہی ہے۔
تفصیلات کے مطابق گڈز اینڈ سروس ٹیکس (جی ایس ٹی) میں رجسٹرڈ ٹیکس دہندگان کی تعداد تو بڑھ رہی ہے، لیکن ساتھ ہی رٹرن نہیں فائل کرنے والے ٹیکس دہندگان کی تعداد میں بھی اضافہ ہوا ہے۔گزشتہ سال یکم جولائی سے ملک بھر میں ان ڈائرکٹ ٹیکس کا نیا نظام یعنی جی ایس ٹی کا نفاذ عمل میں آیا تھا۔ اس وقت رجسٹرڈ ٹیکس دہندگان کی تعداد 74،61،214 تھی۔ ذرائع نے بتایا کہ اب تک 87.02 فیصد افرادنے جولائی 2017 کے لئے رٹرن داخل کیا ہے. وہیں، اس سال جولائی میں رجسٹرڈ ٹیکس دہندگان کی تعداد بڑھ کر 94،70،282 ہو گئی ہے، لیکن ان میں سے 73.15 فیصد نے ہی رٹرن داخل کیا ہے۔جی ایس ٹی کے تحت ڈیڑھ کروڑ روپے تک کا سالانہ کاروبار کرنے والے ٹیکس دہندگان کو اب سہ ماہی رٹرن بھرنا ہوتا ہے جس کی آخری تاریخ سہ ماہی ختم ہونے کے بعد ایک ماہ تک ہوتی ہے۔ وہیں ڈیڑھ کروڑ روپے سے زیادہ کا کاروبار کرنے والوں کو ہر ماہ رٹرن داخل کرنا ہوتا ہے اور اس کے لئے انہیں 20 دن کا وقت ملتا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Pin It on Pinterest

RSS
Follow by Email
Facebook
Twitter
Pinterest
LinkedIn
Instagram